ترقیاتی منصوبے وقت پر مکمل کئے جائیں ، امداد علی پتافی

ترقیاتی منصوبے وقت پر مکمل کئے جائیں ، امداد علی پتافی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)صوبائی وزیر ورکس اینڈ سروسز امداد علی پتافی نے محکمہ کے افسران کو ترقیاتی منصوبوں میں قواعد و ضوابط پر سختی سے عمل درآمد کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام ترقیاتی منصوبوں کو مقررہ وقت پر شفاف طریقہ سے مکمل کیا جائے ۔یہ ہدایات انہوں نے محکمہ کا چارج سنبھالنے کے بعد ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کیں ۔اجلاس میں ورکس اینڈ سروسز کے تمام جاری ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں سیکریٹری ورکس اینڈ سروسز اعجاز احمد میمن، چیف انجینئرز ، پراجیکٹ ڈائریکٹرز، سپرنٹنڈنٹس اور محکمہ کے ایگزیکٹو انجینئرز نے شرکت کی۔متعلقہ انجینئرز نے اپنے اپنے علاقہ کے ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں آگاہ کیا۔ صوبائی وزیر نے افسران کو ہدایت کی کہ وہ جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ حاصل کریں اور واٹس اپ گروپ بنائیں تاکہ معلومات اور تفصیلات کا تیز ترین تبادلہ ہو سکے۔صوبائی وزیر نے افسران کو تاکید کی کہ وہ قواعد و ضوابط کی پابندی کریں اور تمام جاری منصوبوں میں تعمیراتی کام پر کوئی سمجھوتہ نہ کریں اور تمام منصوبوں کو بروقت مکمل کریں ۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں ان منصوبوں پر توجہ کم دی گئی اور اب اس سلسلہ میں کسی بھی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ اور تمام مرمتی کام مناسب طریقہ سے ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائے۔امداد علی پتافی نے ہدایت کی کہ سڑکوں کی تعمیر اور ڈیزائین میں نکاسی آب پر خاص توجہ دی جائے تاکہ سڑکوں پر پانی جمع نہ ہونے پائے۔ انہوں نے کہا کہ تمام شرکاء کو دفتری اوقات کار کی سختی سے پابندی کرنے کے احکامات دئے اور کہا کہ اس سلسلہ میں کوئی غیر حاضری برداشت نہیں کی جائے گی نیز اپنے ہیڈ کوارٹر کو چھوڑنے سے پہلے متعلقہ افسر سے اجازت لینے کی پابندی کی جائے۔صوبائی وزیر ورکس اینڈ سروسز نے گڈ گورننس پر زور دیتے ہوئے انجینئرز کو ہدایت کی کہ وہ PC-Iکی تیاری کے دوران جگہ کا ذاتی طور پر معائنہ کریں ۔انہوں نے چیف انجینئرز کو ہدایت کی کہ وہ سڑکوں کے اطراف میں تجاوزات نہ ہونے دیاجائے اور ترقیاتی کام شروع کرنے سے قبل یوٹیلیٹی کمپنیز سےNOCلازمی حاصل کریں۔ انہوں نے فیلڈ افسران کو کہا کہ ان کی کارکردگی ترقیاتی منصوبوں پر پیشرفت سے مشروط ہوگی اور تنبیہ کی کہ ان کی ہدایات پر عمل نہ کرنے والوں کے خلاف سخت تادیبی کاروائی کی جائے گی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -