کرک ،تخت نصر تی ٹی ایم اے کے ٹھیکوں میں شدید مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف

کرک ،تخت نصر تی ٹی ایم اے کے ٹھیکوں میں شدید مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف

  

کرک (بیورورپورٹ) ٹی ایم اے تخت نصرتی کے سالانہ ٹھیکوں کی نیلامی میں شدیدمالی بے ضابطگیوں کا انکشاف ٹی ایم او اور تحصیل ناظم نے پراپرٹی اور میلہ مویشیاں کے ٹھیکے بلیک لسٹ ٹھیکیداروں کو اونے پونے داموں فروخت کئے سب سے زیادہ بولی دینے والے ٹھیکیدار نے بھانڈا پھوڑ دیا ۔منگل کے روز میڈیا کے نمائندوں سے خصوصی گفتگو میں گورنمنٹ کنٹرکٹر گل راؤف نے انکشاف کیا کہ ٹی ایم اے تخت نصرتی کے سالانہ ٹھیکوں دو فیصد پراپرٹی ٹیکس،میلہ مویشیاں احمد آباد اور تخت نصرتی کی نیلامی جو تین اگست کو کینسل ہوئی تھی کیلئے میں نے بھی سی ڈی جمع کی تھی اور پانچ اگست کو ہونیوالی نیلامی میں بھی حصہ لیاتھا جسے تحصیل ناظم نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر کینسل کرکے آٹھ اگست کو کرانے کا اعلان کیا تھا مگر آٹھ اگست کو ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت دفتر سے غائب ہوکر موبائل فون بھی بند کیا تھا اور جب میں نے دفتر میں موجود ٹی ایم او گل نائب خان کو درخواست دینے کی کوشش کی تو انہوں نے درخواست لینے سے صاف انکار کیا انہوں نے کہا کہ میں نے ٹی ایم اے میں جمع کی جانیوالی درخواست میں واضح کیا تھا کہ پراپرٹی ٹیکس جو محکمہ 65 لاکھ 51 ہزار پر دے رہا ہے میں 87 لاکھ روپے ، میلہ مویشیاں احمد آباد 22 لاکھ کی جگہ 40 لاکھ اور تخت نصرتی کا 16 لاکھ کی جگہ 25 لاکھ روپے پر لینے کو تیار ہوں جبکہ ٹی ایم او اور تحصیل ناظم نے مجھے نظر انداز کرکے کرک سٹی کے ایک نجی ہوٹل میں بلیک لسٹ ٹھیکیداروں سے لاکھوں روپے وصول کرکے اونے پونے داموں ان پر فروخت کیا اور کاغذی کارروائی میں ڈیپارٹمنٹل سٹاف کے آرڈر کئے انہوں نے کہا کہ جمعہ کے روز اسسٹنٹ کمشنر نے بھی میلہ مویشیاں احمد آباد پر چھاپہ مارکر جعلی رسیدیں قبضے میں لی تھی اور ریکارڈ بھی طلب کیا تھا مگر انصاف کی حکومت میں بھی ٹی ایم او اور تحصیل ناظم کیخلاف کوئی کارروائی نہیں ہوئی انہوں نے انصاف اور ترازوکے عالمبردار صوبائی حکومت سے سالانہ ٹھیکوں کی نیلامی فوری منسوخ کرنے اور حکومتی خزانے کو کروڑوں کا نقصان پہنچانے والے ٹی ایم او اور تحصیل ناظم کیخلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -