سرکاری املاک پر قبضہ کی کسی کو اجازت نہیں ،محمد سلیم

سرکاری املاک پر قبضہ کی کسی کو اجازت نہیں ،محمد سلیم

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ) ایگزیکٹیوآفیسر نوشہرہ کینٹ محمد سلیم نے کہا ہے کہ کسی کو بھی سرکاری املاک، زمین اور دکانوں پر قبضے کی اجازت نہیں دیں گے نوشہرہ کینٹ کو خوبصورت اور ماڈل شہر بنانے کا تہیہ کررکھا ہے اس لئے نوشہرہ کینٹ سے بس سٹینڈ اور فلائنگ کوچ اڈہ اور چنگ چی سٹینڈ کو باہر منتقل کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے اس سے نوشہرہ کینٹ کے تاجر اور عوام کو خوبصورت شہر میسر ہوگا ٹیکسز، پلازوں اور دکانوں کے کرائے سے نوشہرہ کینٹ کے تمام علاقوں میں ترقیاتی منصوبے مکمل کئے جاتے ہیں جبکہ عوام کو صحت، تعلیم، پینے کی صاف پانی کی فراہمی، سٹریٹ لائٹ کے بہترین نظام اور بارش کے پانی سے بچاؤ کیلئے سیوریج نظام کو جدید تقاضوں کے مطابق بنائے گئے ہیں جن دکانوں کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں ان دکانوں میں پلازوں کی تعمیر کے بعد پریمیم کے بغیر کنٹونمنٹ رولز کے مطابق نئے ایگریمنٹ کے تحت دئیے جائیں گے موتی بازار کے تمام تاجر فوری طورپر اپنے دکانوں کے ساتھ کیبن اور تڑے ازخود مسمار کردے بصورت دیگر کنٹونمنٹ انتظامیہ خود ناجائز تجاوزات ختم کردیں گے خوشحال پورہ کے دکانداروں کا مسئلہ فوری طورپر حل کردیاگیا ہے اور وہ اپنے دکانوں میں اپنے کام جاری رکھ سکیں گے ان خیالات کااظہارانہوں نے انجمن تاجران ضلع نوشہرہ کے ضلعی عہدیداران ضلعی صدر آیاز پراچہ، جنرل سیکرٹری سعید بخش، سرزمین، صرافہ ایسوسی ایشن کے صدر سجاد زرگر، جنرل سیکرٹری سیٹھ اورنگزیب اور گوہر علی کی قیادت میں وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ میرا مشن یہ ہے کہ نوشہرہ کینٹ کو ایک مثالی شہر بناؤ اس لئے نوشہرہ کینٹ کے تمام بازاروں سے ناجائز تجاوزات ختم کردئیے ہیں اور مزید خوبصورت بنانے کیلئے بس سٹینڈ، فلائنگ کوچ اڈہ اور چنگ چی اڈوں کو شہر سے باہر منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے انہوں نے کہا کہ کنٹونمنٹ انتظامیہ تاجروں اور عوام کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کررہے ہیں میرے دروازے سب کیلئے کھلے ہیں کسی کے ساتھ ناانصافی نہیں ہوگی لیکن ناجائز قابضین کبھی معاف نہیں کیاجائے گا کیونکہ یہ پراپرٹی کنٹونمنٹ بورڈ کی ہے جس کی آمدنی نوشہرہ کینٹ کے تاجروں اور عوام پر خرچ ہورہی ہے انہوں نے کہا کہ ہم نوشہرہ کینٹ میں مساجد پر بھی خرچ کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ نوشہرہ کینٹ کے بعض بازاروں میں بارش کے پانی کی وجہ سے تاجروں اور عوام کو جس مشکلات کاسامنا ہے اس کے لئے ہم نے پلان بنادیا ہے ان بازاروں اور گلی کوچوں کے سڑکوں کو تعمیر کرکے اونچا کیاجارہا ہے جس میں نئی بڑی بڑی پائپیں بچھانے سے بارش کا پانی کھڑا نہیں ہوگا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -