چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ پر بہتان تراشی، ڈاکٹر شاہد مسعود پر 45 روز کی پابندی عائد

چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ پر بہتان تراشی، ڈاکٹر شاہد مسعود پر 45 روز کی پابندی ...
چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ پر بہتان تراشی، ڈاکٹر شاہد مسعود پر 45 روز کی پابندی عائد

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نے چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ پر بہتان تراشی کرنے پر سینئر اینکر پرسن ڈاکٹر شاہد مسعود کے پروگرام کو 45 روز کیلئے بند کردیا ہے۔

پیمرا کی جانب سے جاری حکم میں کہا گیا ہے کہ اے آروائی نیوز کے پروگرام ” لائیو ود ڈاکٹر شاہد مسعود “ میں اینکر پرسن ڈاکٹر شاہد مسعود نے 22 جون 2016 کو چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ پر بہتان تراشی کی جو کہ آئین کے آرٹیکل 19 اور 204 کی روح کے خلاف ہے ، جس کے مطابق اس بات کی ممانعت ہے کہ خبر یا تبصرہ کے دوران کسی لفظ یا لب و لہجے سے عدلیہ اور فوج پر بہتان تراشی یا تضحیک کی ممانعت ہے ۔

والز نے 14اگست کے موقع پر بچوں کے ساتھ جشن آزادی کامزہ دوبالا کرنے کا طریقہ متعارف کروادیا

پیمرا نے اے آروائی نیوز کے پروگرام ” لائیو ود ڈاکٹر شاہد مسعود “ کی نشریات پر پیمرا آرڈیننس 2002 ، پیمرا (ترمیمی ) ایکٹ 2007 کے سیکشن 27 کے تحت پینتالیس دن کیلئے پابندی عائد کرنے کی سفارش کردی ہے۔ پابندی کا اطلاق رواں ماہ 15 اگست سے 28 ستمبر تک ہوگا۔ کونسل کی سفارشات کے مطابق دوران پابندی ڈاکٹر شاہد مسعود اے آروائی نیوز پر نہ تو اینکر کے طور پر ، نہ ہی تجزیہ کار کے طور پر اور نہ ہی مہمان کے طور پر کسی بھی نیوز بلیٹن، پروگرام یا معمول کی نشریات کے دوران لائیو یا ریکارڈ شدہ پروگرام میں شامل ہوسکیں گے۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -