’اگر یہ کام کیا تو تمہاری خیر نہیں‘ اسرائیل کا ظلم اتنا بڑھ گیا کہ امریکہ کے صبر کا پیمانہ بھی لبریز ہوگیا، تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیل کو خطرناک ترین دھمکی دے دی

’اگر یہ کام کیا تو تمہاری خیر نہیں‘ اسرائیل کا ظلم اتنا بڑھ گیا کہ امریکہ کے ...
’اگر یہ کام کیا تو تمہاری خیر نہیں‘ اسرائیل کا ظلم اتنا بڑھ گیا کہ امریکہ کے صبر کا پیمانہ بھی لبریز ہوگیا، تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیل کو خطرناک ترین دھمکی دے دی

  

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) مظلوم فلسطینیوں پر اسرائیل کے انسانیت سوز مظالم اس حد کو پہنچ گئے ہیں کہ بالآخر اس کے سب سے بڑے حمایتی امریکہ کو بھی شرم آگئی ہے، جس نے پہلی دفعہ اسرائیل کو وارننگ دے دی ہے کہ اگر ہیبرون کے پہاڑوں میں واقع فلسطینی خیمہ بستیوں کو اجاڑا گیا تو اس کا نتیجہ بہت برا ہوگا۔

ویب سائٹ ہارٹز کی رپورٹ کے مطابق اسرائیل فلسطینیوں کو ان کے شہروں اور دیہاتوں میں برباد کرنے کے بعد اب پہاڑوں میں بسی ان کی خیمہ بستیوں کے درپے ہے۔ ایک ایسی ہی بستی سوسیا ہے جو کہ ہیبرون کے پہاڑوں میں آباد ہے اور اسرائیل اسے تباہ کرنے پر تلا ہوا ہے۔

رپورٹ کے مطابق امریکہ کے اعلیٰ حکام نے اسرائیل کو خبردار کیا ہے کہ اگر سوسیا کی بستی کو تباہ کرنے کی کوشش کی گئی تو امریکہ کی جانب سے شدید ردعمل آئے گا۔ دوسری جانب یورپی یونین اور برطانوی حکومت کی جانب سے بھی اسرائیل کو ایسے ہی پیغامات بھجوادئیے گئے ہیں۔ برطانوی دفتر خارجہ کی جانب سے اسرائیل کو واضح الفاظ میں بتادیا گیا ہے کہ اگر سوسیا کی فلسطینی بستی کو تباہ کیاگیا تو بین الاقوامی سطح پر اس کی حمایت جاری رکھنا مشکل ہوجائے گا۔

پاک فوج کا سب سے بڑا امتحان آگیا، روس، ایران اور چین سے مقابلے کا وقت ہوگیا

امریکہ، یورپی یونین اور برطانیہ کی جانب سے یہ ردعمل اس فلسطینی کوشش کا نتیجہ ہے جس میں مغربی ممالک سے رابطہ کرکے بتایا گیا کہ اسرائیل آنے والے چند دنوں کے دوران سوسیا کے گاﺅں کو تباہ کرنے والا ہے۔ اسرائیل نے اپنی مخصوص مکاری کا مظاہرہ کرتے ہوئے مغربی ممالک کے تیور دیکھ کر یہ موقف اپنالیا ہے کہ سوسیا کی تقدیر کا فیصلہ اسرائیلی ہائی کورٹ آف جسٹس کے فیصلے کی روشنی میں کیا جائے گا، جو اس معاملے میں دائر کئے گئے مقدمے کی سماعت کررہا ہے۔

واضح رہے کہ سوسیا کی بستی میں وہ مظلوم اسرائیلی پناہ لئے ہوئے ہیں جو گزشتہ 30 سال سے اسرائیلی مظالم کے باعث دربدر ہیں۔ اسرائیل نے ان مصیبت کے ماروں کی پہاڑوں پر بسائی گئی بستی کو بھی غیر قانونی قرار دے کر تباہ کرنے کی تیاری کر لی ہے۔ اسرائیل کی دائیں بازو کی جماعتیں اپنی حکومت سے بھی آگے ہیں اور مظلوم فلسطینیوں کے گھروں کو تباہ کرنے کے جنون میں نیم پاگل ہو رہی ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -