اسلحہ چلتا بھی ہے یا نہیں؟پولیس اہلکاروں کی سیشن کورٹ کے باہر ہوائی فائرنگ

اسلحہ چلتا بھی ہے یا نہیں؟پولیس اہلکاروں کی سیشن کورٹ کے باہر ہوائی فائرنگ
اسلحہ چلتا بھی ہے یا نہیں؟پولیس اہلکاروں کی سیشن کورٹ کے باہر ہوائی فائرنگ

  

لاہور(نامہ نگار)سانحہ کوئٹہ کے بعد عدالتوں کے مرکزی دروازوں پر پولیس کی اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے،سیشن کورٹ، سول کورٹ اور دیگر عدالتوں میں کسی بھی شخص کی بغیر تلاشی داخلے کی ممانعت کر دی گئی ہے،گزشتہ روزسیشن کورٹ کے باہر پولیس نے ہوائی فائرنگ کر کے اسلحے کوچیک بھی کیا، اس حوالے سے ایس پی سیکورٹی رانا طاہرنے سیشن کورٹ کا دورہ کرکے اہلکاروں کو خصوصی ہدایات جاری کیں،سانحہ کوئٹہ کے حوالے سے وکلائکاسوگ تیسرے روزبھی جاری رہا، ایس پی سکیورٹی رانا طاہرنے خود سیشن کورٹ پہنچ کر وکلائکی سیکورٹی چیک کی، ان کی آمد سے قبل پولیس اہلکاروں نے سیشن کورٹ کے مین گیٹ پر ہوائی فائرنگ کر کے اسلحے کو چیک بھی کیا، ایس پی سیکورٹی کاکہنا تھا کہ سانحہ کوئٹہ کے بعد عدالتوں کی سکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔سیشن کورٹ کے انچارج انسپکٹر عابد حسین کا کہنا تھا کہ پولیس کے جوان سیشن کورٹ کے مختلف دروازوں پر تعینات کر دیئے گئے ہیں، سکیورٹی کی جو خامیاں تھیں ان کو دور کر دیا گیا ہے۔سیشن کورٹ، سول کورٹ اور دیگر عدالتوں میں کسی بھی شخص کی بغیر تلاشی داخلے کی ممانعت کر دی گئی ہے

مزید :

لاہور -