کانسٹیبل کو قتل کرنیوالے 3 ملزموں کو 60 سال قید ‘ جرمانے کا حکم

کانسٹیبل کو قتل کرنیوالے 3 ملزموں کو 60 سال قید ‘ جرمانے کا حکم

ملتان(خبر نگار خصوصی)جج انسداددہشت گردی کی خصوصی عدالت ملتان نے ڈکیتی میں مزاحمت پر کانسٹیبل کوقتل کرنے کے مقدمہ میں ملوث 3 ملزموں کو مجموعی طورپر 60،60 سال قید اورجرمانے کی سزاکا حکم دیاہے۔فاضل عدالت (بقیہ نمبر51صفحہ12پر )

میں تھانہ ممتازآبادکے کانسٹیبل محمدرفیق نے 3 جون 2014ء کو مقدمہ درج کرایاکہ وہ ڈیوٹی ختم کرکے گھر جارہاتھاکہ راستے میں 3 ملزموں نے اس کو اسلحہ کے زورپرروک لیااوراس سے 14سوروپیاورموبائل چھین لیا اس دوران اس نے مزاحمت کرکے پکڑنے کی کوشش کی اس کو گولی مارکرفرارہوگئے بعدازاں مدعی کانسٹیبل ہسپتال میں جاں بحق ہوگیاا وردوران تفتیش 3ملزموں کوگرفتارکرکے ان سے برآمدگی بھی کی گئی ہے۔فاضل عدالت نے مقدمہ کی سماعت کے بعدملزم محمدشہزاد عرف جمی کوقتل ،ڈکیتی اوردہشت گردی کی دفعات کے تحت مجموعی طورپر60 سال قیداور3 لاکھ روپے جرمانہ نیز ملزموں محمدحسنین اورمحمدشہبازکو بھی مذکورہ دفعات کے تحت 60،60 سال قیداور2،2 لاکھ روپے جرمانے کی سزاکا حکم دیاہے۔

کانسٹیبل قتل فیصلہ

مزید : ملتان صفحہ آخر