بین المذاہب ہم آہنگی وقت کی ضرورت ہے ، ڈاکٹر کھٹو مل جیون

بین المذاہب ہم آہنگی وقت کی ضرورت ہے ، ڈاکٹر کھٹو مل جیون

کراچی(اسٹاف رپورٹر)معاون خصوصی وزیر اعلیٰ سندھ برائے اقلیتی امورڈاکٹر کھٹو مل جیون نے کہا ہے کہ ہر سال گیارہ اگست کو اقلیتوں کا قومی دن منایا جاتا ہے جس میں اقلیتی برادری کی خدمات اور قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا جاتا ہے ۔یہ بات انہوں نے گیارہ اگست کے سلسلے میں منائی جانے والی تقریبات کے انتظامات کو حتمی شکل دیتے ہوئے کہی ۔ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے بتایا کہ اس موقع پر سیمینار ،پروگرامز اور اجلاس منعقد کیے جائیں گے جس میں مختلف سماجی اور حکومتی اداروں کی طرف سے اقلیتی برادری کے حقوق اور کرداد کے بارے میں روشنی ڈالی جائے گی ۔انہوں نے کہا ہے کہ یہ بات قابل فخر ہے کہ سندھ حکومت سابقہ صدر پاکستان آصف علی زرداری کی قیادت میں قائد اعظم محمد علی جناح کے ان اقوال تم آزاد ہو ،تم آزاد ہو ،چاہے مندر جاؤ یا مسجد یا اور کوئی بھی عبادت گاہ ،تمہارا تعلق کسی بھی مذہب سے ہو یا کوئی بھی عقیدہ ہوکی پالیسی پر عمل پیرا ہیں۔حکومت کا پہلا فرض امن قائم رکھنا ہے تاکہ مملکت کی جانب سے عوام کو ان کی زندگی ،املاک ،مذہبی رسومات اور مذہبی عبادات اور تحفظ کی پو پوری ضمانت حاصل ہو ، کو مدنظر رکھتے ہوئے گیا رہ اگست کو قومی اقلیتی دن منانے کا اہتمام کیا گیا ہے ۔ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے مزید کہا کہ پاکستان دھرتی ہماری ماں ہے اور یہاں ہر فرقہ ،مذہب اور عقیدہ سے تعلق رکھنے والوں کے ساتھ یکساں سلوک کیا جاتا ہے اور یہاں ایک مذہب کے لوگ دوسرے مذہب کے لوگوں کا یکساں احترام کرتے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں پہلی مرتبہ شہید محترمہ بینظیر بھٹو نے اقلیتی برادری کی قربانیوں اور خدمات کے پیش نظر اور معاشرے میں امن وامان ،برداشت اور بھائی چارگی کی فضاء کو فروغ دینے کے لئے باقاعدہ محکمہ اقلیتی امور کا قیام کیا اس موقع پر سابق مشیر وزیر اعلیٰ سندھ انور لال دین ،سکھ برادری کے رہنما رمیش سنگھ ،ڈاکٹر پردیپ کمار اور دیگر بھی موجود تھے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر