لفافہ صحافی کا لفظ تو آپ نے سنا ہوگا لیکن پہلی مرتبہ خاتون اینکر ماریہ میمن نے لفافہ وصول کرنے کا اعتراف کرلیالیکن ۔ ۔۔

لفافہ صحافی کا لفظ تو آپ نے سنا ہوگا لیکن پہلی مرتبہ خاتون اینکر ماریہ میمن ...
لفافہ صحافی کا لفظ تو آپ نے سنا ہوگا لیکن پہلی مرتبہ خاتون اینکر ماریہ میمن نے لفافہ وصول کرنے کا اعتراف کرلیالیکن ۔ ۔۔

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں انٹرنیٹ تک باآسانی رسائی اور موبائل فونز کی وجہ سے سوشل میڈیا صارفین کی تعداد میں ہوشربااضافہ دیکھنے میں آیا اور ہرکوئی اپنی رائے دینے میں بھی آزاد ہے لیکن اگر کوئی صحافی کسی کی رضایا منشاءکیخلاف کوئی بات کہہ دے توفوری طورپر اسے’ لفافہ ‘کہہ دیا جاتاہے ۔لیکن پہلی بار خاتون اینکر ماریہ میمن نے لفافہ قبول کرنے کا اعتراف کرلیا۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پر ماریہ میمن نے اپنے پروگرام کا پرومو شیئرکیا تو عامر فیاض نامی ایک صارف نے انہیں لفافہ اینکر قراردیدیا۔ ایسے میں ماریہ کا دفاع کرنے کے لیے سینئر صحافی اور تجزیہ نگار افتخار احمد آگے آئے اور عامر فیاض سے بھی دوقدم آگے بڑھتے ہوئے لکھا کہ ’ایک نہیں ۔ ۔۔ کئی‘۔

افتخار احمد کی اس ٹوئیٹ پر ماریہ میمن نے جواباً لکھا کہ ’میں نے صرف اپنی بارات پر ہی لفافہ قبول کیا، سچی کہانی، ہاہاہا، سرجی ، میری شادی پر لفافہ دینے کا شکریہ ‘۔

مزید : اسلام آباد