بچے کی ہلاکت پر مریم نواز بھی میدان میں آ گئیں، لیکن بات ایسی کہی کہ سوشل میڈیا صارفین نے ان پر چڑھائی کر دی

بچے کی ہلاکت پر مریم نواز بھی میدان میں آ گئیں، لیکن بات ایسی کہی کہ سوشل ...
بچے کی ہلاکت پر مریم نواز بھی میدان میں آ گئیں، لیکن بات ایسی کہی کہ سوشل میڈیا صارفین نے ان پر چڑھائی کر دی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیراعظم نواز شریف کی ریلی میں شریک گاڑی کی ٹکر سے جاں بحق بچے کے معاملے پر مریم نواز شریف بھی میدان میں آ گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ نواز شریف کی ریلی میں شریک گاڑی کی ٹکر سے جاں بحق بچے کی ویڈیو منظرعام پر آ گئی، دلخراش مناظر دیکھ کر آپ اپنے آنسوﺅں پر قابو نہیں رکھ پائیں گے

انہوں نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں کہا ہے کہ ” بچے کی ہلاکت کے انتہائی افسوسناک واقعے کے بارے میں خبریں آ رہی ہیں۔ مقامی قیادت کو بلاتاخیر بچے کے اہل خانہ سے ملنے اور ان کی داد رسی کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔“

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ ”2 درجن ایم این ایز نے نواز شریف بڑا جھٹکا دینے کا فیصلہ کر لیا ہے کیونکہ۔۔۔“ ریلی میں مصروف نواز شریف کیلئے اب تک کی سب سے خطرناک خبر آ گئی، ایسا کام ہو گیا جس کا انہوں نے اب تک سوچا بھی نہ ہو گا

واضح رہے کہ گجرات میں نواز شریف کی ریلی میں شریک گاڑی کی زد میں آ کر 15 سالہ حامد جاں بحق ہو گیا جس کے چچا کا کہنا ہے کہ وہ حادثے کے وقت چیخ چیخ کر مدد کیلئے پکارتا رہا اور منتیں کرتا رہا مگر کوئی بھی مدد کیلئے نہ رکا۔

مریم نواز کے اس ٹویٹ کے بعد سوشل میڈیا صارفین انہیں آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے انتہائی سخت ردعمل کا مظاہرہ کر رہے ہیں ۔

ایک صارف شاہ زیب خان نے لکھا ”کاش یہ مریم صفدر کا بیٹا جنید صفدر ہوتا، پھر پانامہ کی رانی کو درد محسوس ہوتا۔“

شاہ زیب خان نے مزید لکھا ”پاکستانی قوم کو کیڑے مکوڑے سمجھتے ہیں یہ ظالم لوگ۔ کچھ پیسے دے کر لواحقین کا منہ بند کروا دیں گے لیکن معصوم جان واپس نہیں آئے گی۔“

محمد اشتیاق نے بچے کی ویڈیو اپ لوڈ کرتے ہوئے لکھا ”نواز شریف کے بچے قوم کے بچے۔ یہ بچہ صرف اپنے ماں باپ کا بچہ ہے کیونکہ یہ غریب بچہ ہے۔“

واجد محمود نے لکھا ”اور یہ بچے کی موت پر شہادت کا رتبہ دے کراپنے کھاتے میں شہید ڈال کر سیاست کر رہے ہیں۔“

رخسانہ نے سوال کیا”مقامی قیادت کیوں۔۔۔؟ آپ کے پاپا اب وزیراعظم نہیں رہے! اور وہ اس کے ذمہ دار ہیں۔“

حمائمہ ملک نے لکھا ”ایسی ماﺅں کی بددعائیں تمہیں نیست و نابود کر دیں گی۔“

ایمان فاطمہ نے لکھا ”شرم کر لو اگر ہے تو۔۔۔ خودغرضی کی انتہاءہے تم لوگوں کی۔“

سید فخر نے لکھا ”ٹوئٹر رانی۔۔۔ انسان کا بچہ مرا ہے، پلیز ڈرامے بند کرو۔“

طاہر مسعود نے لکھا ”بچے کے وارث چیختے رہے۔ کوئی گاڑی نہیں رکی، یہ لوگ مسلمان تو دور کی بات انسان بھی نہیں ہیں۔ اللہ تعالیٰ ان کو ہدایت دے۔

مزید : اسلام آباد