دنیا کا شرمناک ترین جرم، آدمی نے ایسا اخلاق باختہ کام کردیا کہ اب 12 ہزار سال قید کی سزا سنائی جائے گی، وہ کام کردیا جو دنیا کی تاریخ میں کسی نے نہ کیا ہوگا

دنیا کا شرمناک ترین جرم، آدمی نے ایسا اخلاق باختہ کام کردیا کہ اب 12 ہزار سال ...
دنیا کا شرمناک ترین جرم، آدمی نے ایسا اخلاق باختہ کام کردیا کہ اب 12 ہزار سال قید کی سزا سنائی جائے گی، وہ کام کردیا جو دنیا کی تاریخ میں کسی نے نہ کیا ہوگا

  

کوالالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک) ملائیشیاءمیں ایک بدبخت شخص نے ایسے شرمناک ترین جرم کا ارتکاب کر ڈالا ہے کہ جس کی دنیا میں مثال نہیں ملتی۔ اب اس بدطینت کو 12ہزار سال قید کی سزا دی جائے گی۔ دی انڈیپنڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق یہ درندہ صفت انسان 6ماہ تک اپنی ہی کم سن بیٹی کو درندگی کا نشانہ بناتا رہا ۔ اس عرصے میں 36سالہ ملزم نے 646بار اپنی 15سالہ بیٹی کو ہوس کا نشانہ بنایا اور ڈپٹی پبلک پراسیکیوٹر ایمی سیازوانی کے مطابق اب اسے 12ہزار سال قید اور ہزاروں کوڑوں کی سزا دی جائے گی۔

قربت کے لمحات میں خاتون کے منہ سے ایک لفظ ایسا نکل گیا کہ غصے میں آکر آدمی نے جان سے ہی مار ڈالا

رپورٹ کے مطابق لڑکی کی شناخت چھپانے کے لیے ملزم کا نام ظاہر نہیں کیا جا رہا، تاہم معلوم ہوا ہے کہ دو سال قبل اس کی طلاق ہو گئی تھی۔ اس کے تین بچے تھے، جن میں متاثرہ لڑکی سب سے بڑی تھی۔ اس نے 6ماہ قبل عدالت کے ذریعے اس لڑکی کی حوالگی حاصل کی اور گھر لا کر اسے زیادتی کا نشانہ بنانا شروع کر دیا۔ 6ماہ بعد لڑکی جب اپنی ماں سے ملی تو اس نے تمام صورتحال اسے بتا دی جس پر ماں پولیس کے پاس چلی گئی اور مقدمہ درج کروا دیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس