پاکستان کی روشنیاں ، امن اور ترقی کے دشمنوں نے میرے خلاف سازش کی،20کروڑ عوام کے مینڈیٹ کی توقیر کی بحالی تک چین سے نہیں بیٹھوں گا: نواز شریف

پاکستان کی روشنیاں ، امن اور ترقی کے دشمنوں نے میرے خلاف سازش کی،20کروڑ عوام ...
پاکستان کی روشنیاں ، امن اور ترقی کے دشمنوں نے میرے خلاف سازش کی،20کروڑ عوام کے مینڈیٹ کی توقیر کی بحالی تک چین سے نہیں بیٹھوں گا: نواز شریف

  

گوجرانوالہ(ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ مسلم لیگ(ن) نے ملک سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کیا،امن بحال کرایا ، پاکستان کی روشنیاں اور امن لوگوں کو برداشت نہیں ہے، ان لوگوں کا خیال تھا کہ نواز شریف کامیاب ہوگیا تو پھر مسلم لیگ(ن) اقتدار میں آجائے گی اس لئے یہ لوگ میرے خلاف سازشوں پر اتر آئے ہیں میں انہیں آج یہ پیغام دیتا ہوں کہ عوام ایک بار پھر مجھے منتخب کردیں گے مگر مجھے اپنی بحالی سے غرض نہیں ہے ،میں اپنے آپ کو بحال کرانے نہیں آیا میں پاکستان کا عزت و وقار بحال کرانے آیا ہوںجب تک 20کروڑ عوام کا مینڈیٹ بحال نہیں ہوتا میں چین سے نہیں بیٹھوں گا۔آج نواز شریف آپ کے سامنے ہے،ججوں نے کاغذوں سے نکال دیا مگر یہ لوگ مجھے عوام کے دلوں سے نکال نہیں سکتے ان لوگوں کو پاکستان کی ترقی راس نہیں آئی ۔ فیصلہ کرنے والو! گوجرانوالہ کا فیصلہ دیکھ لو انہوں نے فیصلہ تسلیم نہیں کیا،نواز شریف گھر میں بیٹھنے والا نہیں ہے۔

سابق وزیر اعظم نواز شریف کا قافلہ مشن جی ٹی روڈ پر گجرات پہنچ چکا ہے ، پہلوانوں کے شہر میں نواز شریف کا فقید المثال استقبال کیا گیا اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ 2013ءمیں جب ہماری حکومت برسر اقتدار آئی تو اس ملک پر اندھیروں کا راج تھا، معاشی طور پر پاکستان دیوالیہ ہو چکا تھا اور روزانہ کی بنیاد پر یہاں لاشیں گر رہی تھیں ہم نے اس ملک کی روشنیاں بحال کرائیں ، معاشی طور پر پاکستان تیزی سے ترقی کر رہا ہے جبکہ بجلی کی ریکارڈ پیدوار ہوئی ، جس تیزی سے ملک ترقی کی جانب جا رہا تھا اتنی ہی تیزی سے نواز شریف کو نکالنے کے لئے سازشیں کی گئیںجبکہ پاکستان کی روشنیاں اور امن واپس لانے پر مجھے نکالا گیا، پاکستان میں کسی بھی منتخب عوامی نمائندے کو مدت پوری کرنے نہیں دی گئی جو بھی وزیر اعظم اس ملک میں آیااس کو ذلیل و رسوا کرکے نکالا گیا۔ جو روایت پاکستان میں پچھلے ستر سالوں سے جاری ہے اس کی مثال دنیا کے کسی بھی ملک میں نہیں ملتی ۔ پاکستان کتنا بدنصیب ملک ہے جو پچھلے 70سالوں سے اپنی راہ متعین نہیں کرسکا۔ ملک میں18وزرائے اعظم آئے جن میں سے سب کو اوسطا ڈیڑھ سال حکومت کرنے کا موقع میسر آیا جبکہ تین آمر اس ملک کے تیس سال کھا گئے۔جو بھی وزیر اعظم آیا تو اسے ذلیل و رسوا کرکے نکالا گیا، کسی کو پھانسی دی گئی ، کسی کو ہتھکڑی لگائی گئی ، کسی کو جیلوں میں ڈالا گیا اور کسی کو جلا وطن کردیاگیا ، یہ صرف پاکستان میں ہو رہا ہے ، دنیا کے کسی بھی ملک میں اس کی مثال نہیں ملتی۔ میں یہاں اپنے آپ کو بحال کرانے نہیں آیا بلکہ 20کروڑ عوام کی مینڈیٹ کی بحالی کے لئے آیا ہوں، میں اس ملک کے جوانوں کو اس ملک کی عزت اور مستقبل کے لئے جگانے آیا ہوں۔نواز شریف اس ملک کے عوام کے ساتھ جیئے گا آپ اپنے دل سے عہد کریں کہ پاکستان کے ساتھ ایسا اب کبھی نہیں ہونے دو گے۔، آﺅ مل کر پاکستان کو بدل دیں ، ایک نئی تاریخ رقم کردیں،مجھے آپ پر فخر اور یقین ہے کہ آپ مجھے مایوس نہیں کروں گا،ہم سب مل کر پاکستان کی تقدیر بدلیں گے۔

نواز شریف نے پہلوانوں کے شہر آمد پر گوجرانوالہ کے باسیوں کاشکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ جو پیار آج مجھے ملا ہے میں ساری زندگی بھلا نہیں پاﺅں گا، میں آپ کا ممنون اور مرید ہوگیا ہوں جس طرح آپ نے میرا فقید المثال استقبال کیا ہے ۔گوجرانوالہ کے بھائیو مبارک ہو آپ کو نواز شریف اس محبت کو زندگی بھر نہیں بھولے گا ، میں خوش نصیب ہوں کہ گوجرانوالہ کے باسی نواز شریف سے اتنا پیار کرتے ہیں، میں گھر جا رہا تھا مجھے گوجرانوالہ نے روک لیا، اس شہر کی ایک بڑی تاریخ ہے، جب ججوں کی بحالی کے لئے ہم جب گوجرانوالہ پہنچے تو اعلان ہوگیا کہ جج بحال ہوگئے۔

مزید : قومی /اہم خبریں