حقوق اہلسنت محاذکا مولانا فضل الرحمان کیخلاف ملک بھر میں احتجاج

حقوق اہلسنت محاذکا مولانا فضل الرحمان کیخلاف ملک بھر میں احتجاج

لاہور (پ ر)اہلسنت کی ملک گیر تنظیموں پر مشتمل حقوق اہلسنت محاذ کے زیر اہتمام پاک فوج اور عدلیہ کے خلاف بیان دینے پر مولانا فضل الرحمان کے خلاف ملک بھر میں احتجاج کیا گیا جمعہ کے اجتماعات میں مذمتی قراردادیں منظور کی گئیں محاذ کے سربراہ پیر سید شاہد حسین گردیزی ، مولانا جمیل احمد نقشبندی، مفتی محمد نعیم رضوی، سید اقبال حسین شاہ ، علامہ دلشاد حسین ، مولانا گلنواز ، علامہ شفقت علی خان ، مولانا محمد ندیم ، علامہ محمد حسین ، مولانا سمی اللہ اور دیگر نے مختلف مقامات پر جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فضل الرحمان الیکشن میں شکست کے بعد بوکھلاہٹ کا شکار ہو کر عدلیہ اور فوج کی کردار کشی کر رہے ہیں انہیں ملکی اداروں سے زیادہ اپنی کرسی کھسنے کی زیادہ فکر ہے انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کے بڑوں نے تحریک پاکستان کی مخالفت کی جبکہ مولانا کہ والد مفتی محمود نے کہا تھا کہ ہم پاکستان بنانے کے گناہ میں شامل نہیں مولانا فضل الرحمان اسلام کے نام پر ووٹ لیکر اسلام آباد کے ماحول میں گم ہو جاتے ہیں ان کے کردار کی وجہ سے علمائے حق بدنام ہو رہے ہیں مولانا ملکی اداروں سے دشمنی کرنے کی بجائے یہ ملک چھوڑ کر انڈیا چلے جائیں علماء نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی کشتی میں سوار ہونے والے وہ لوگ ہیں جو مقدس ایوان میں بیٹھ کر پاک فوج کو گالیاں دیتے رہے ایسے لوگوں کو قوم نے مسترد کیا ہے پاک فوج کے دشمن پاکستانی قوم کے ووٹ کے مستحق نہیں۔

ملک وقوم کی سلامتی اور دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پاک فوج نے اپنی جانوں کے نذرانے دے کر ملک میں امن بحال کروایا ہمیں اپنی فوج پر فخر اور فوج کو گالیاں دینے والے ملک دشمنوں سے نفرت ہے انہوں نے چیف جسٹس پاکستان اور چیف آف آرمی سٹاف سے مطالبہ کیا فضل الرحمان سے پچھلی تمام حکومتوں میں رہتے ہوئے ان کا احتساب کیا جائے اور کشمیر کمیٹی کا کھاتہ بھی کھولا جائے جبکہ ریاستی اداروں کے خلاف تقریر کرنے پر فضل الرحمان کے خلاف غداری کا مقدمہ چلایا جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4