معیشت کی مضبوطی کیلئے سٹیک ہولڈرز سے مشاورت یقینی بنائی جائے،صنعتکار تنظیمیں

معیشت کی مضبوطی کیلئے سٹیک ہولڈرز سے مشاورت یقینی بنائی جائے،صنعتکار ...

لاہور (اسد اقبال )صنعتکار تنظیموں کے رہنماؤ ں نے اسلامک ڈویلپمنٹ بینک کی جانب سے پاکستان کو 500ارب روپے قرض دینے پر رضامندی کو خوش آئند اقدام قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان معاشی استحکام کیلئے وہ اقدامات کر ے جس سے ملک اپنے پاؤ ں پر کھڑا ہو سکے جس میں سٹیک ہولڈرز کی مشاورت کو یقینی بنایا جائے۔ اس حوالے سے یہ بھی ضروری ہے کہ اس امر کا تعین سوچ سمجھ کر لیا جائے کہ اسلامک ڈویلپمنٹ بینک کی جانب سے والی قرض کی خطیر رقم کو کس مد میں خرچ کرنا چاہئے ۔ان خیالات کا اظہار فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سابق ریجنل چیئر مین منظور الحق ملک ،لاہور چیمبر آف کامر س اینڈ انڈسٹر ی کے صدر طاہر جاوید ملک ، ویمن چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی سابق صدر قیصرہ شیخ ،پیاف کے چیئر مین عرفان اقبال شیخ اور پاکستان فارماسوٹیکل مینوفیکچرز ایسو سی ایشن کے چیئر مین خواجہ شاہ زیب اکرم نے "روزنامہ پاکستان "سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ رہنماؤ ں نے کہاکہ سعودی عرب کا حمایت یافتہ اسلامک ڈویلپمنٹ بینک کی جانب سے پانچ سو ارب روپے قرض نئی حکومت کو فوری اخراجات پورے کرنے کیلئے ناکافی ہیں کیو نکہ کروڑوں ڈالرز کی قسطیں ادا کر نی ہیں جبکہ کئی دوسرے معاشی چیلنجز کا بھی سامنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد سب سے پہلے حکومتی اخراجات میں واضح کمی کریں ۔انڈسٹری کیلئے خصوصی ریلیف جبکہ معاشی پالیسی میں اصلاحات لائی جائیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر نو منتخب حکومت کو معیشت میں استحکام کیلئے آئی آیم ایف سے بھی قرض لینا پڑتا ہے تو اس میں کوئی برائی نہیں تاہم ضرورت اس امر کی ہے کہ نو منتخب حکومت ملک میں موجود قدرتی وسائل کو بروئے کار لائے تاکہ پاکستان اپنے پیروں پر کھڑا ہو کر معاشی ترقی کی پٹری پر رواں دواں ہو سکے ۔

صنعتکار تنظیمیں

مزید : صفحہ آخر