رانا ثناء اللہ سے پولیس سیکیورٹی واپس لینے سے روک دیاگیا

رانا ثناء اللہ سے پولیس سیکیورٹی واپس لینے سے روک دیاگیا

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے راہنماء اورسابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ سے تاحکم ثانی پولیس سیکیورٹی واپس لینے سے روک دیا ہے ،جسٹس شمس محمود مرزا نے اس سلسلے میں دائررانا ثنا ء اللہ کی درخواست پر چیف سیکرٹری،ہوم سیکرٹری اور آئی جی کو آئندہ ہفتے کے لئے نوٹس جاری کر دیئے ہیں۔درخواست گزار کی جانب سے اعظم نذیر تارڑ ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ رانا ثناء اللہ 2008 ء سے 2018 ء تک مسلسل صوبائی وزیر قانون اور کابینہ کمیٹی کے چیئرمین رہے،عام انتخابات کے دوران اور بعد میں مختلف دہشت گرد تنظیموں کی جانب سے سنگین دھمکیاں مل رہی ہیں۔درخواست گزار نے چیف سیکرٹری، آئی جی پنجاب سمیت تمام متعلقہ فورمز پر سیکیورٹی کے لئے درخواستیں دیں لیکن شنوائی نہیں کی جا رہی،پولیس سیکیورٹی نہ دینا آرٹیکل 4،9،14 اور 25کی خلاف ورزی ہے۔درخواست گزار نے استدعا کی پولیس کو مزید اضافی سیکیورٹی فراہم کرنے اور کیس کے فیصلے تک موجودہ سیکورٹی واپس نہ لینے کا حکم دیا جائے۔

رانا ثناء

مزید : صفحہ آخر