ہنگو ،اورکزئی کے ماموں زئی متاثرین کی 10سال بعد گھروں کو واپسی

ہنگو ،اورکزئی کے ماموں زئی متاثرین کی 10سال بعد گھروں کو واپسی

ہنگو( بیورورپورٹ) قبائلی ضلع اورکزئی کے علاقہ ماموں زئی کے متاثرین دس سال بعد اپنے علاقوں کو واپسی۔یخ کنڈو مقام پر انٹری چیک پوسٹ پر گاڑیوں کی لمبی قطارے، سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات۔ متاثرین کو امداد نہ ملنے کی شکایت۔ تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع اورکزئی کے اپر تحصیل کے دور افتادہ علاقہ ماموں زئی کے متاثرین کی واپسی کا عمل آج سے شروع ہوگیا۔ اے سی اپر تحصیل حیدر حسین نے بتایا کہ اپر تحصیل کے دور افتادہ علاقہ ماموں زئی کے متاثرین دس سال بعد اپنے اعلاقوں کو واپس جانے کا عمل شروع ہوگیا ہے۔ آج دس اگست کو جبہ،گوٹا خیل،کچ گڑھی،لاٹو کلی، تیزئی کلی، اخون زادگان، اوٹ میلہ، تا لئے کلی کے علاقوں کے 186خاندان واپس جا چکے ہیں۔ ماموں زئی متاثرین کے واپسی کا یہ عمل دس اگست سے 20 اگست تک جاری رہے گا۔ ماموں زئی متاثرین کے لئے انٹری چیک پوسٹ یخ کنڈو کے مقام پر بنایا گیا ہے۔ انٹری چیک پوسٹ کے علاقے میں سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے ہے۔یاد رہے کہ ضلع اورکزئی میں کلعدم تنظیم تحریک طالبان کا آغاز اسی علاقے سے ہوا تھااور پھر قلیل وقت میں طالبان نے پورے اورکزئی علاقے پر قبضہ کر لیاجبکہ دوسرے جانب واپس جانے والے متاثرین خیال خان، گل کمال، اصغر خان نے اورکزئی انتظامیہ کے ناقص انتظامات پر شدید تنقید کرتے ہوئے متاثرین کو امداد نہ ملنے پر سخت احتجاج کیا۔

مزید : کراچی صفحہ اول