کراچی گرین لائن بس منصوبہ تاخیر کا شکار،شہریوں کو مشکلات کا سامنا

کراچی گرین لائن بس منصوبہ تاخیر کا شکار،شہریوں کو مشکلات کا سامنا

کراچی (اسٹاف رپورٹر)وفاقی حکومت کے ادارہ کراچی انفرااسٹرکچر ڈیولپمنٹ کمپنی لمیٹڈ کی زیر نگرانی گرین لائن بس منصوبہ سرجانی ٹان تا میونسپل پارک جنوری 2016 میں شروع کیا گیا اور اسے دسمبر 2017 میں مکمل کیا جانا تھا، ابھی اس کا فیز ون اے سرجانی تا گرومندر تکمیل کے آخری مراحل میں ہے، فیز ون بی نمائش چورنگی کئی وجوہات کے باعث دو سال سے تاخیر کا شکار ہے اور فیز ٹو تاج میڈیکل کمپلیکس تا میونسپل پارک شروع ہی نہیں کیا جاسکا ہے۔ نمائش چورنگی کی دو سائیڈوں پر انڈر پاس کے ریمپ کا ترقیاتی کام انتہائی سست روی کے ساتھ کیا جارہا ہے، گرومندر سے آگے کراچی ایکسرے لیبارٹری سے نمائش چورنگی تک درمیانی فٹ پاتھ اور اطراف کی سڑک کا کچھ حصہ شامل کرکے کھدائی اور دیگر ترقیاتی کام کیا جارہا ہے۔ دوسری سائیڈ نمائش چورنگی تا امام بارگاہ علی رضا ایم اے جناح روڈ کی فٹ پاتھ اور سڑک کا کچھ حصہ شامل کرکے کھدائی اور ترقیاتی کام کیا جارہا ہے۔ نمائش چورنگی پر چھیپا دسترخوان سے گرومندر جانے والے ٹریک پر صرف دو لین ہیں اور یہاں فٹ پاتھ چھوٹی نہیں کی گئی ہے جس کی وجہ سے اس مقام پر ٹریفک کی روانی شدید متاثر رہتی ہے، کراچی ایکسرے لیبارٹری کے پاس ترقیاتی کاموں کی وجہ سے سڑک دھنس گئی تھی، وفاقی حکومت نے یہاں صرف مٹی کی بھرائی کردی اور کارپیٹنگ کا کام نہیں کیا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول