یونین کونسل 10ملتان کا انتخاب کالعدم قرار دینے کی سماعت 27اگست تک ملتوی

یونین کونسل 10ملتان کا انتخاب کالعدم قرار دینے کی سماعت 27اگست تک ملتوی

ملتان(وقائع نگار)ہائیکورٹ ملتان بینچ نے الیکشن ٹربیونل کی جانب سے یونین کونسل 10 ملتان کا(بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

انتخاب کالعدم قرار دینے کافیصلہ آئندہ سماعت تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کو27 اگست کوپیش ہونے کاحکم دیاہے۔فاضل عدالت میں چیئرمین یونین کونسل رانامحمدامجدنے درخواست دائرکی تھی کہ الیکشن ٹربیونل میں اس کے مقابلے میں ناکام امیدواروں تحریک انصاف کی قربان فاطمہ اور(ن)لیگ کے رانااشتیاق علی خان نے انتخابی عذرداری دائرکی کہ آزادامیدوارچیئرمین رانا امجد اوروائس چیئرمین طارق مرتضیٰ خان ملیزئی نے بالٹی کے نشان پر الیکشن لڑا اور ان کو 3143ووٹ لے کر کامیاب ظاہر کیا اوران کو ملی بھگت کرکے دھاندلی کے ذریعے کامیاب کرایا گیاہے جبکہ وائس چیئرمین طارق مرتضی خان ملیزئی نے اپنے اثاثہ جات کو چھپایا حالانکہ وہ اپنے کاغذات نامزدگی کے ساتھ اپنے اثاثہ جات اور اپنی اہلیہ ،بچوں کے اثاثہ جات کی تفصیل بھی دینے کا پابند تھا۔اس طرح درخواست گذاروں کوکئی پولنگ اسٹیشنوں میں داخل بھی نہیں ہو نے دیا گیااورقوائد و ضوابط کی کھلم کھلا خلاف ورزی کی گئی جس پرالیکشن ٹربیونل نے درخواستیں منظور کرتے ہو ئے اس حلقے میں دوبارہ الیکشن کرانے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں جبکہ درخواست گذارکے وائس چیئرمین نے درخواست گذاروں سے ملی بھگت کرکے تکنیکی بنیادوں پریہ فیصلہ جاری کرایاہے جس میں کئی قانونی خامیاں موجودہیں اس لئے مذکورہ فیصلہ منسوخ کرنے کا حکم دیا جائے۔

انتخاب کالعدم

مزید : ملتان صفحہ آخر