ڈپٹی کمشنر چترال کے زیر صدارت اجلاس ،مجموعی طور پر صورتحال کا جائزہ

ڈپٹی کمشنر چترال کے زیر صدارت اجلاس ،مجموعی طور پر صورتحال کا جائزہ

پشاور( سٹاف رپورٹر)ڈپٹی کمشنرچترال خورشید عالم محسود کی زیر صدارت انکے دفتر میں ضلعی امن کمیٹی کا ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں ضلع بھر میں امن امان کی مجموعی صورت حال کا جائزہ لیا گیا ۔ اجلا س میں چترال ٹاسک فورس کے کمانڈنٹ کرنل معین الدین ، ایڈیشنل دپٹی کمشنر منہاس الدین ، محکمہ پولیس کے اعلیٰ حکام ، ڈی ایف او محکمہ جنگلات شوکت فیاض ، چترال چیمبر آف کامرس کے صدر سرتاج احمد خان ، سیاسی جماعتوں ، تاجر یونین اور اقلیتی برادریوں کے نمائیندوں نے شرکت کی ۔ اجلاس کے شرکاء نے ضلع میں امن عامہ کی صورتحال کو اطمینان بخش قرار دیا او رامید ظاہر کی کہ آئیندہ کیلئے بھی چترال کا امن و سکون برقرار رہے گا۔ اس موقع پر ڈی سی چترال نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ چترال میں کئی مسالک کے لوگ رہتے ہیں تاہم ان میں مکمل ہم آہنگی پائی جاتی ہے اور یہاں پر اقلیتی برادریوں کے لوگ بھی پر سکون زندگی گزار رہے ہیں جنہیں تمام بنیادی حقوق حاصل ہیں جبکہ یہاں کے باسی ایک دوسرے کے ساتھ مکمل بھائی چارے کا مظاہرہ کررہے ہیں جو دیگر علاقوں کیلئے ایک مثال ہے۔ڈپٹی کمشنر نے اس موقع پر چترال میں بجلی اور دیگر مسائل کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ چترال میں پیسکو اور پیڈو سے متعلق عوامی شکایات کے ازالے کیلئے متعلقہ اداروں سے رابطہ کیا جائے گا جبکہ ضلع کے مختلف مقامات پر آبنوشی و آبپاشی سکیموں کو فعال بنانے کیلئے بھی اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ۔ ڈپٹی کمشنر نے اس موقع پر بونی کے مقام پر ایس ار ایس پی کے پن بجلی گھر کی بندش اور شجرکاری کا کام سرانجام دینے والے نگہبانوں کے مبینہ نو مہینوں کے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کا بھی نوٹس لیامتعلقہ محکمے کے حکام کو ہدایت کی کہ نگہبانوں کی تنخواہوں کافوری طور پر ادائیگی کا بندوبست کیا جائے۔ اس موقع پر انہوں نے سیاسی اور مذہبی رہنماؤں سے بھی کہا کہ وہ ضلع میں امن وامان برقرار رکھنے میں اپناکردار ادا کریں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر