فلاحی معاشرے کی تشکیل کیلئے صوفیا ء کی تعلیمات پر عمل کرنا ہو گا،طاہر رضا بخاری

فلاحی معاشرے کی تشکیل کیلئے صوفیا ء کی تعلیمات پر عمل کرنا ہو گا،طاہر رضا ...

لاہور (سٹی رپورٹر)دہشت گردی اور انتہاپسندی کے خاتمہ کے لیے متصوفانہ افکار کی ترویج وقت کی اہم ضرورت ہے۔روادارانہ فلاحی معاشرے کی تشکیل کے لیے صوفیا کا اسلوب دعوت وتبلیغ اپنانا ہوگا ،جس سے فرقہ وارانہ منافرت کے خاتمے اور انسان دوستی و عدلِ اجتماعی کو فروغ میسر آئیگا۔ برصغیر میں صوفیا کی خانقاہیں اور اُن سے متصل مدارس علوم ومعارف کے مرکز اور تزکیہ وطہارت کے مسکن ہیں۔ ان خیالات کااظہار ڈاکٹر طاہر رضا بخاری ڈائریکٹرجنرل اوقاف نے داتا دربار لاہور میں منعقدہ عظیم الشان "پیغامِ پاکستان کانفرنس"میں صدارتی خطبہ میں کیا ۔ انہوں نے کہا قومی وحدت ،ملکی استحکام ،ملی یکجہتی ،بین المسالک ہم آہنگی اور بین المذاہب مکالمہ کی ترویج کے لیے محراب ومنبر کے موثر کردار سے قوم راہنمائی حاصل کرتی رہے گی ۔ جامع مسجد حضرت داتا صاحب میں" منعقدہ پیغام پاکستان" کانفرنس کے عظیم اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے نیشنل مشائخ کونسل پاکستان کے چیئرمین خواجہ غلام قطب الدین فریدی داتا دربار کے خطیب مفتی محمدرمضان سیالوی، مولانا قاری محمدعارف سیالوی سمیت دیگر مقررین نے دفاعِ وطن کے لیے افواجِ پاکستان کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ خطہ اللہ تعالیٰ کی خصوصی عطا ہے ، جس کی حفاظت ہمارا قومی اور دینی فریضہ ہے ۔مقررین نے کہا کہ یوم آزادی کے موقع پر ہم اس عزم کا اعادہ کرتے ہیں کہ پاکستان کے دفاع اور ملک وملت کے استحکام کے لیے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔

طاہر رضا

مزید : میٹروپولیٹن 1