چارسدہ، پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کا 15اگست کو تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان 

چارسدہ، پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کا 15اگست کو تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان 

  

چارسدہ (بیورورپورٹ) پرائیوٹ ایجوکیشن نیٹ ورک نے ضلعی بھر میں 15 اگست سے تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کر دیا۔حکومت کی طر ف سے رکاوٹ ڈالی گئی تو بھر پور مذاحمت کی جائے گی۔ پن نے کرونا وبا ء کے دوران حکومت سے بھر پور تعاون اور معاونت کرکے متعدد نجی تعلیمی اداروں کو قرنطینہ سنٹر ز بنانے کی پیشکش کی تھی۔ا س حوالے سے ضلعی بھر کے تمام نجی سکولز مالکان اور ایڈمنسٹریٹرز کی ایک بڑا مشاورتی اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں پین کے ضلعی صدرنفیس اللہ، صوبائی نائب صدر جاوید خان ، ضلعی سیکرٹری جنرل طاہر امین،  ضلعی فنانس سیکرٹری سرور شاہ، ضلعی سیکرٹری اطلاعات سجاد علی ترنگزئی، ڈسٹرکٹ سکروٹنی کمیٹی کے ممبر امجد جلال, شمالی ہشتنگر زون کے صدر انعام اللہ خان او ر دیگر زون کے صدور اور دیگر ذمہ داران نے شرکت کی۔اجلاس سے ضلعی صدر نفیس اللہ صاحب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جس دن وطن عزیز میں کرونا وبا ء نے سر اٹھایا تو اسی دن سے پن نے حکومت کا ساتھ دیکر نجی تعلیمی اداروں کو بند کردیا اور ساتھ ہی نجی تعلیمی اداروں کو بطور قرنطینہ سنٹرز پیش کردیا جبکہ قرنطینہ سنٹرز میں مریضوں کے دیکھ بھال کے لئے اپنے رضاکاربھی دیے۔ انہوں نے کہاکہ پہلے دن سے لیکر آج تک حکومت کے احکامات پر من و عن عمل کیا۔ انہوں نے اس بات پر  افسوس کا اظہار کیا کہ اس وقت ملک میں زندگی کے تمام شعبہ جات جس میں سنیماہال، مارکیٹس، بازاریں، سپورٹس میدان، پبلک ٹرانسپورٹ اور سیرو سیاحت کے مقامات کھول دیے گئے لیکن جہاں ملک و ملت کے مستقبل کے نونہال تیار ہو رہے ہیں وہ بدستور بند ہیں۔ دنیا کے زیادہ تر ممالک میں جہاں پر کرونا وباء عروج پر رہا وہاں تعلیمی ادارے کھلے رہے ۔ انہوں نے کہا کہ نونہال وطن کے مستقبل کو تباہی سے بچانے کے لئے پن نے پاکستان بھر بشمول اذاد کشمیر میں 15 اگست سے تمام تعلیمی ادارے ایس او پیز کے تحت  درس و تدریس کے لیے کھولنے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ پن سرکاری سکولوں اور مدارس کھولنے کا بھی مطالبہ کرتی ہے اگر حکومت نے نجی تعلیمی ادارے کھولنے میں خلل ڈالنے کی کوشش کی تو بھر پور مذاحمت کی جائے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -