مہمند، مشران کی جانب سے ملی بھگت سے حاصل کردہ جعلی لیز مسترد 

مہمند، مشران کی جانب سے ملی بھگت سے حاصل کردہ جعلی لیز مسترد 

  

 مہمند(نمائندہ پاکستان)بائیزئی ملنگ کور کے عمائدین نے ملی بھگت سے حاصل کردہ جعلی لیز کو مسترد کردیا۔ انتظامیہ کے بعض اہلکار چور ی چھپکے سے من پسند افراد کو ریڈ اینڈ وائٹ ماربل پہاڑ پر قبضہ کرنے کے درپے ہیں۔قوم کسی بھی صورت اجازت نہیں دینگے۔ ملنگ کور مشران کے پریس کانفرنس۔تفصیلات کے مطابق ضلع بھر کے معدنیات کی غیر قانونی لیز اور پہاڑوں پر قبضہ روزکا معمول بن گیا ہے۔انتظامیہ کے چنداہلکار اپنے من پسنداوربااثر افراد کو نوازنے میں مصروف ہیں اور قومی اتفاق رائے،مشاورت اورجلسہ عام کے بغیر غیر قانونی لیز جاری کرنے کے درپے ہیں۔ان خیالات کا اظہار تحصیل بائیزئی ملنگ کور کے عمائدین اول خان،حبیب الرحمان،عبدالرحیم ودیگر نے درجنوں ساتھیوں سمیت اپنے اپنے خیالات کا اظہار ہنگامی پریس کانفرنس کے موقع پر کرتے ہوئے کہا۔ کہ ہم گزشتہ تین سالوں سے جعلی لیزوں کی وجہ سے ذلیل و خوار ہورہے ہیں۔جبکہ اب دوبارہ وہی عمل قوم کے ساتھ دوبارہ دہرایا جارہا ہے۔ اب چند مفاد پرست لوگوں نے قومی مشاورت کے بغیر انتظامیہ کے چند اہلکاروں کی ملی بھگت سے چوری چھپکے سے طورہ خواہ ریڈ اینڈ وائٹ ماربل پہاڑ پر دوبارہ لیز منظور کرنے کے ناکام کوشش جاری کر رکھاہیں۔ جو کہ بلکل غیر قانونی اور ہماری ملکیت پر قبضہ کرنے کے مترادف ہیں۔ اور ہم جملہ مشران اور عوام اس لیز کو قطعی طور پر مسترد کرتے ہیں۔اور ہم اپنی قومی ملکیت پر کسی کو زبردستی قابض نہیں ہونے دینگے۔انہوں نے محکمہ معدنیات اور انتظامیہ سے پرزور مطالبہ کیا کہ اس سنگین مسئلے کی فوری اور شفاف تحقیقات کرکے ملوث افراد کے خلاف کاروائی کی جائے۔تاکہ آئندہ کوئی ہمارے وسائل پر زبردستی اور غیر قانونی قبضے کی کوشش نہ کرے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -