سوشل میڈیا پر فرقہ واریت پھیلا نیوالوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ 

    سوشل میڈیا پر فرقہ واریت پھیلا نیوالوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ 

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے قربان لائنز میں پنجاب سیف سٹی اتھارٹی کے ہیڈ آفس کا دورہ کیا- وزیر اعلیٰ عثمان بزدارکی زیر صدارت پنجاب سیف سٹی اتھارٹی کے ہیڈ آفس میں پنجاب کابینہ کمیٹی برائے امن و امان کا خصوصی اجلاس منعقد ہوا - اجلاس میں محرم الحرام کے دوران کئے جانیوالے سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لیا گیا-وزیر اعلی عثمان بزدار نے عوام کے جان و مال کے تحفظ کیلئے فول پروف سیکورٹی انتظامات کرنے کا حکم دیا- اجلاس میں سوشل میڈیا کے ذریعے فرقہ واریت پھیلانے والے عناصر کیخلاف بلاامتیاز کریک ڈاؤن کا فیصلہ کیا گیا- وزیر اعلی نے ہدایت کی کہ ایسے عناصر کیخلاف بلا تفریق موثر کارروائی کیلئے جامع میکنزم بنایا جائے- وزیر اعلی عثمان بزدار نے کہا کہ محرم الحرام کے دوران عوام کے جان و مال کے تحفظ کیلئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں - مذہبی منافرت پھیلانے والے لٹریچر کو ضبط کر کے متعلقہ افراد کے خلاف کارروائی کی جائے- لاؤڈ سپیکر پر پابندی کے قانون پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے- مجالس اور جلوسوں کی فول پروف سیکورٹی کے انتظامات پیشگی مکمل کئے جائیں -مجالس اور جلوسوں کے روٹس پر تجاوزات ختم کی جائیں - انتہائی حساس مقامات پر پولیس نفری میں اضافہ کیا جائے-اشتعال انگیز تقاریر کرنے والے عناصر کے خلاف قانون حرکت میں آئے گا- کسی کو بھی مذہبی دل آزاری کی اجازت نہیں دی جا سکتی - پنجاب سیف سٹی اتھارٹی میں میڈیا سے گفتگو کر تے ہوئے عثمان بزدار نے کہا کہ رواں برس بھی محرم الحرام کے دوران بہترین انتظامات کئے جائیں گے اور کابینہ کمیٹی برائے امن و امان باقاعدگی سے اجلاس کر کے تیاریوں کا جائزہ لے گی - کابینہ کمیٹی تمام ڈویژنل ہیڈ کوارٹر ز پر جائے گی اور تمام انتظامات کی مانیٹرنگ کرے گی-محرم الحرام میں آرمی اور رینجرز کی بھی ریکوزیشن کر رہے ہیں - مجھے امید ہے کہ محرم الحرام کے دوران سیکورٹی کے بہترین انتظامات کئے جائیں گے- میں عوام سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اجتماعات میں جانے سے گریز کریں اور ماسک لازمی پہنیں اور سماجی فاصلے برقرار رکھیں ایک اور سوال کے جواب میں وزیر اعلی نے کہا کہ چند روز قبل میں نے رات گئے لاہورکا وزٹ کیا اور جہاں کمی یا کوتاہی دیکھی وہاں فوری ایکشن لیااو ر اس حوالے سے متعلقہ محکموں کو ضروری ہدایات بھی جاری کیں -میں آئندہ بھی اس طرح کے سرپرائزوزٹ جاری رکھوں گا- ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں نیب جلوس کے ساتھ نہیں جاؤں گا، مجھے کیا ضرورت ہے جلوس کے ساتھ جانے کی - میں ذاتی طور پر جا کر پیش ہو ں گااور اپنا موقف پیش کروں گااورجو قانون کے مطابق ہو گا وہی ہو گا-ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پنجاب میں کوئی فائل نہیں رکتی -

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -