سندھ کے لوگ درختوں پر چڑھ کر مدد مانگتے رہے، حنید لاکھانی

  سندھ کے لوگ درختوں پر چڑھ کر مدد مانگتے رہے، حنید لاکھانی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء و سربراہ بیت المال سندھ حنید لاکھانی نے حالیہ مون سون کی بارشوں سے اندرون سندھ میں پیدا ہونے والی مشکلات میں پاک فوج کی امدادی کاروائیوں کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب بھی قوم پر مشکل وقت آیا ہے پاک فوج کی امدادی ٹیموں نے قوم کی مدد کی، مون سون کی بارشوں سے ضلع دادو کے علاقے کاچھو کے 400سے زائد دیہات اور فصلیں زیرآب آگئی ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کیا، حنید لاکھانی نے کہا کہ گزشتہ سال کی نسبت اس دفعہ مون سون کی بارشوں کی کئی گنا زیادہ ہونے کی پیشن گوئی ہونے کے باوجود سندھ حکومت کی تیاریاں ادھوری نظر آئیں، اندرون سندھ میں بارشوں سے ہونے والی تباہی کو سندھ حکومت کھڑی دیکھتی رہی غریب لوگ درختوں پر چڑھ کر مدد مانگتے  رہے جبکہ وزیراعلیٰ سندھ ہیلی کاپٹر پر گھومتے رہے، سندھ کے حکمرانوں سے کوئی امید نہیں، انہوں نے کہا کہ بارشوں سے متاثر ہونے والے اندرون سندھ کے لوگوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے اور متاثرہ خاندانوں کی مدد کریں گے، سندھ حکومت کی نا اہلی اور ناقص کارکردگی نے  صوبہ سندھ کوتباہ کردیا ہے، مون سون کی بارشوں نے سندھ حکومت کے سارے دعووں کو دھو کر رکھ دیا ہے، دیہاتوں کے علاوہ شہروں کی گلیاں اور سڑکیں بھی تالابوں اور دریاوں کا منظر پیش کرتی رہیں، سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں سیوریج نظام مکمل طور پر تباہ ہو گیا ہے جبکہ سندھ حکومت کے وزراء سب اچھا ہے کا راگ الاپ رہے ہیں یا پھر فوٹوسیشن میں مصروف ہیں 

مزید :

صفحہ آخر -