پی پی،ن لیگ اور تحریک انصاف آئی ایم  ایف کے ایجنڈے پر متفق،سید ذیشان اختر

  پی پی،ن لیگ اور تحریک انصاف آئی ایم  ایف کے ایجنڈے پر متفق،سید ذیشان اختر

  

بہاول پور (بیورورپورٹ ) نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہ جس ملک کا تاجر خوشحال(بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

 نہ ہو وہ ملک ترقی نہیں کرسکتا۔تاجر ٹیکس دیتے ہیں تو ملک چلتے ہیں۔تاجروں نے ہمیشہ سیاست سے بالاتر ہوکر ملک و قوم کی خدمت کی ہے۔وزیراعظم خود اعتراف کرتے ہیں ان کے چاروں طرف مافیاز ہیں۔مافیاز نے پی آئی اے،واپڈا اور ریلوے سمیت قومی اداروں کو تباہ کیا۔زرعی ملک میں چینی اور آٹا نہیں مل رہا۔آئی ایم ایف کے ایجنٹوں نے اداروں کو یرغمال بنا رکھا ہے۔جتنے بھی فیصلے ہورہے ہیں وہ بیرونی دبا? اور آئی ایم ایف کی مرضی سے ہورہے ہیں۔حکومت نے دودن قبل باہمی معاونت کا بل پاس کیا جس کا مقصد ہی آئی ایم ایف کی حکمرانی قبول کرنا ہے جبکہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن نے بل پاس کرنے میں حکومت کا ساتھ دیا۔آئی ایم ایف کے ایجنڈے پر حکومت و اپوزیشن سب ایک ہیں۔آج پیپلز پارٹی، مسلم لیگ ن اور پاکستان تحریک انصاف آئی ایم ایف کے ایجنڈے پر متفق ہیں۔حکومت نے معاشی استحکام کے بہت دعوے کئے تھے ہم کہتے ہیں کہ حکومت اور کچھ نہ کرے روپے کی قیمت 2018کی سطح پر لے آئے۔حکومت نے معیشت کا بیڑا غرق کردیا ہے،جس ملک کی معیشت تباہ ہوجائے اس کا جغرافیہ بھی محفوظ نہیں رہ سکتا۔حکومت نے کشمیر کو بھارت کی جھولی میں ڈال دیا ہے۔آج اس ملک کے مقدس ایوان قومی اسمبلی کو گالم گلوچ اور بدتہذیبی کا اکھاڑہ بنا دیا گیا ہے۔حکمران اور سیاسی لیڈر ایک دوسرے کو ذلیل اور رسوا کرنے کیلئے نئی نئی گالیاں ایجاد کررہے ہیں۔ان حکمرانوں سے خیر کی توقع رکھنا خود کو دھوکہ دینے کے مترادف ہے۔قوم نے ان کو ووٹ دیکر غلطی کی اور دھوکہ کھایا۔

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -