حکومت نے نئی گاڑیوں کی خریداری اور ملازموں کی نئی آسامیوں پر پابندی عائد کر دی 

حکومت نے نئی گاڑیوں کی خریداری اور ملازموں کی نئی آسامیوں پر پابندی عائد کر ...
حکومت نے نئی گاڑیوں کی خریداری اور ملازموں کی نئی آسامیوں پر پابندی عائد کر دی 

  

 اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی حکومت نے مالی کفایت شعاری پالیسی کے تحت مالی سال 2020-21کے دوران تمام وزارتوں اور ڈویژنوں میں نئی گاڑیوں کی خریداری،ملازمتوں کی نئی آسامیوں پر پابندی عائد کردی ہے ۔

نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز کے مطابق وزارتوں و ڈویژنوں میں نئی گاڑیوں اور نئی آسامیوں کی ناگزیر ضروریات کا جائزہ لینے کیلئے ایڈیشنل سیکرٹری خزانہ(اخراجات)کی سربراہی میں پانچ رکنی کمیٹی قائم کردی ہے۔وزارت خزانہ کی جانب سے جاری میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ تمام وزارتوں و ڈویژنوں اور ان کے ماتحت ڈیپارٹمنٹس میں افسران کے اخبارات و جرائد پر بھی پابندی ہوگی اور صرف مجاز افسران کو ایک اخبار یا میگزین لینے کی اجازت ہوگی۔ موٹر سائیکل کے علاوہ تمام اقسام کی گاڑیوں کی خریداری اور نئی اسامیوں پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

بجلی،پانی اور گیس سمیت دیگر یوٹیلٹی بلوں کے اخراجات کو کنٹرول کرنا اور دیگر سرکاری اثاثہ جات کی مینٹی نینس کے اخراجات کو بھی کم سے کم سطع پر لانا اکاونٹنگ افسران کی ذمہ داری ہوگی ، ان اخراجات کو بجٹ میں مختص کردہ فنڈز تک محدود رکھنا ہوگا۔ اگر کسی وزارت وڈویژن میں نئی گاڑیوں یا نئی آسامیاں پیدا کرنا ناگزیر ہوگا تو اس کیلئے قائم کمیٹی ضروریات کا جائزہ لے کر اپنی سفارشات دے گی۔

مزید :

قومی -