پولیس والے کو چھتری پکڑانا ڈی سی شیخوپورہ کو بے حد مہنگا پڑگیا

پولیس والے کو چھتری پکڑانا ڈی سی شیخوپورہ کو بے حد مہنگا پڑگیا
پولیس والے کو چھتری پکڑانا ڈی سی شیخوپورہ کو بے حد مہنگا پڑگیا

  

لاڑکانہ (مانیٹرنگ ڈیسک) بیوروکریسی کی رعونت بہت کچھ زیربحث رہتی ہے اور اب ڈپٹی کمشنر شکار پور نوید لریک نے ایسی حرکت کر ڈالی ہے کہ ایک بار پھر یہ بحث سوشل میڈیا پر عود کر آئی اور لوگوں نے نوید لریک سمیت پوری بیوروکریسی ہی کو کھری کھری سنا ڈالیں۔ ویب سائٹ ’پڑھ لو‘ کے مطابق حالیہ دنوں سوشل میڈیا پر ایک تصویر وائرل ہوئی جس میں ڈی سی شکار پور نوید لریک ایک جگہ کا معائنہ کر رہے ہوتے ہیں اوراس دوران انہوں نے ایک پولیس اہلکار کو چھتری لے کر اپنے اوپر سایہ کرنے پر مامور کر رکھا ہوتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق نوید لریک کے یہ شاہانہ ٹھاٹھ اور ایک پولیس اہلکار کو ذاتی ملازم سے بھی کمتر کر دینے کی حرکت نے لوگوں کو شدید مشتعل کر دیا۔ ڈی آئی جی لاڑکانہ عرفان بلوچ نے بھی اس واقعے کا نوٹس لے لیا ہے اور فوری طور پر ان سے پولیس پروٹیکشن واپس لے لی ہے۔ انٹرنیٹ صارفین کا کہنا ہے کہ ”ڈی سی بھی سرکاری ملازم ہوتا ہے اور اسے کوئی حق نہیں پہنچتا کہ کسی دوسرے سرکاری ملازم کو اپنا ذاتی ملازم بنا لے اور اس کی تضحیک کرے۔“واضح رہے کہ اس سے قبل اسسٹنٹ کمشنر مردان بھی اسی نوعیت کے کیس میں تنقید کا نشانہ بن چکے ہیں۔ 

مزید :

علاقائی -سندھ -لاڑکانہ -