بینک آف خیبر کی راوی روڈ لاہوربرانچ نے خدمات کا آغاز کردیا

بینک آف خیبر کی راوی روڈ لاہوربرانچ نے خدمات کا آغاز کردیا

  

لاہور(کامرس رپورٹر)بینک آف خیبر کی راست اسلامی بینکاری شاخ نے مین راوی روڈ لاہور میں باقاعدہ خدمات کا آغاز کردیاہے بینک کے منیجنگ ڈائریکٹر عمران صمد نے ایک سادہ اور پروقار تقریب میں شاخ کامقامی کاروباری برداری ،معززین علاقہ اور بینک کے اعلی حکام کی موجود گی میں افتتاح کیا انہوں نے اس موقع پر کہا کہ سال 2013میں بینک آف خیبر راست اسلامی بینک کاری کے کامیاب اجراءکے 10سال منارہا ہے گذشتہ ایک دہائی میںبینک نے اسلامی بینکاری شاخوں کی تعداد میں اضافہ کر کے اسلامی مالیاتی خدمات اور معاونت کے دائرکار کو فروغ دیا ہے جس سے ہر سطح کے کاروباری اور تجارتی حلقوں کو اپنی سرگرمیوں کو فروغ دینے میں مالی معاونت سے فائدہ پہنچا ہے جو کہ سماجی خوشحا لی کا موجب بنی اور اسلامی اقدار کا بھی افتتاحی تقریب میں بینک کے گروپ ہیڈ اسلامی بینکاری کامران مسعود خان ڈویژنل ہیڈ بزنس ڈویلمپنٹ روایتی بینکاری لعل نواز خٹک ڈویژنل ہیڈ اسلامی بنیکاری محمد نوید قریشی ہیڈ شریعہ کاپلینس محمد اسد شریعہ ایڈوائیرز عبدا لصمد خان ہیڈ مارکیٹنگ سید علی نواز گیلانی نے شرکت کی حافظ مبشر علی منیجر بینک آف خیبر راست اسلامی بینکاری میں راوی روڈ نے افتتاحی تقریب میں معاونت کے فرائض انجام دیئے۔عمران صمد نے اس موقع پر حاضرین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بینک آف خیبر راست اسلامی بینکاری کے صارفین کو بینکاری کی تمام سہولیات اسلامی شریعہ کے عین مطابق 2003سے باقاعدہ طور پر فراہم کر رہا ہے جس سے ان کے بڑھتے ہوئے اعتماد کی وجہ سے ہم اپنی اسلامی بینکاری شاخوں کی تعداد میں اضافہ کر رہے ہیں۔

عمران صمد نے کہا کہ راست اسلامی بینکاری کے تمام معاملات کی نگرانی ایک شریعہ سپروائزری کمیٹی اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی ہدایت اور قانون کے مطابق کر رہی ہے اور بینک میں اسلامی مالیاتی قوانین کی اصل روح کے مطابق مختلف اسلامی مالیاتی اسکیمیں تیار کی گئی ہے تاکہ عوام اسلامی طریقہ کار کے تحت اور شریعت کے عین مطابق مالیاتی اسکیموںسے مستفید ہو سکے اس سلسلے میں مزید اسکمیوں پر کام جاری ہے تاکہ مستقبل قریب میں بینک آف خیبر راست اسلامی بینکاری کے ذریعے مزید اسکمیوں کا اجراءکیا جاسکے تاکہ تجارتی اور کاروباری حلقے اسلام اور شریعت کے عین مطابق مالیاتی اسکیموں سے تجارتی اور کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دے کر سماجی خوشحالی اور اقتصادی ترقی حاصل کر سکے۔

مزید :

کامرس -