وکلا کا پی آئی سی پر حملہ ، ینگ ڈاکٹرز بھی میدان میں آ گئے ، حالات کشیدہ ، 6 افراد کے جاں بحق ہونے کی اطلاعات

وکلا کا پی آئی سی پر حملہ ، ینگ ڈاکٹرز بھی میدان میں آ گئے ، حالات کشیدہ ، 6 ...
وکلا کا پی آئی سی پر حملہ ، ینگ ڈاکٹرز بھی میدان میں آ گئے ، حالات کشیدہ ، 6 افراد کے جاں بحق ہونے کی اطلاعات

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)جنگ کے دنوں میں بھی ہسپتالوں پر حملے نہیں کئے جاتے لیکن وکلا کی بڑی تعدادنے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر حملہ کردیا۔ہم نیوزکے مطابق ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے دعویٰ کیا ہے کہ وکلا کی وجہ سے ہونے والی ہنگامہ آرائی میں 6 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔

صدر وائی ڈی اے نڈاکٹر عرفان نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو میں کہا کہ وکلا کی ہنگامہ آرائی کی وجہ سے چھ افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا اندر کیا ہورہا ہے کسی کو اصل صورتحال کا پتہ نہیں چل رہا کیونکہ پی آئی سی کے بیشتر حصے پر وکلا قابض ہیں جب صورتحال واضح ہوگی تو ہی پتہ چل سکے گا کہ دراصل کتنی ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

اس سے قبل ہم نیوز کے مطابق ڈاکٹر سلمان حسیب نے کہا تھا کہ وکلا کے حملے کے بعد تین سے چار افرادجاں بحق ہوئے جبکہ ایک خاتون ڈاکٹر کے سر پر اینٹ ماری گئی۔جاں بحق ہونے والوں میں ایک بزرگ مریضہ بھی شامل ہیں جن کی شناخت ستترسالہ گلشن کے نام سے ہوئی ہے۔وکلا کے حملے سے مریضوں میں خوف و ہراس پھیلا چکا ہے جبکہ ڈاکٹر اندر محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔اور ہسپتال میں طبی امداد کا سلسلہ رک چکا ہے۔

دنیا نیوز کے مطابق وکلا کے جتھے نے مریضوں کی ڈرپس کھینچ ڈالیں۔بیشتر مریض بیڈز سے نیچے گرگئے۔ ایمرجنسی وارڈزکے شیشے توڑ دیئے گئے۔ہسپتال میں نرسز اور مریضوں کی چیخوں سے خوف و ہراس پھیل چکا ہے۔جبکہ کورریج پر صحافیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔واضح رہے کہ پی آئی سی میں انتہائی تشویشناک حالت کا شکار مریض زیر علاج ہیں جن میں سے اکثریت دور دراز کے علاقوں سے تعلق رکھتی ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں