وکلانے وارڈ میں آتے ہی ثمینہ کی آکسیجن اتاردی،وہ تڑپ تڑپ کر دم توڑ گئی

وکلانے وارڈ میں آتے ہی ثمینہ کی آکسیجن اتاردی،وہ تڑپ تڑپ کر دم توڑ گئی
وکلانے وارڈ میں آتے ہی ثمینہ کی آکسیجن اتاردی،وہ تڑپ تڑپ کر دم توڑ گئی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پنجا ب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں وکلا نے ظلم ، بربریت اور بے حسی کی انتہا کردی۔ہنگامہ آرائی کے دوران  وکلا نے تشویشناک حالت کی شکار ایک لڑکی کا آکسیجن ماسک اتارپھینکا جس کی وجہ سے وہ وہیں پر تڑپ تڑپ کر دم توڑ گئی۔انتقال کرنے والی لڑکی کی عمر بائیس سال تھی ۔ اسے پانچ روز قبل پی آئی سی منتقل کیاگیاتھا۔

تفصیلات کے مطابق دل کے ہسپتال میں وکلانے بے حسی کی مثال قائم کردی۔لڑکی کے والد کے مطابق بائیس سالہ ثمینہ کی حالت تشویشناک تھی لیکن وکلانے وارڈ میں آتے ہی ثمینہ کی آکسیجن اتاردیجس کی وجہ سے وہ تڑپ تڑپ کر دم توڑ گئی۔لڑکی کے والد نے کہا وہ بے بس ہیں انہیں کچھ سمجھ نہیں آتی کس سے انصاف طلب کریں۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور