لاہور ہائی کورٹ بار کے صدر کی وکلاء رہنماؤں کے ہمراہ چیف جسٹس ہائیکورٹ سے ملاقات ،ایسا مطالبہ کر دیا کہ آپ کو بھی غصہ آ جائے گا

لاہور ہائی کورٹ بار کے صدر کی وکلاء رہنماؤں کے ہمراہ چیف جسٹس ہائیکورٹ سے ...
لاہور ہائی کورٹ بار کے صدر کی وکلاء رہنماؤں کے ہمراہ چیف جسٹس ہائیکورٹ سے ملاقات ،ایسا مطالبہ کر دیا کہ آپ کو بھی غصہ آ جائے گا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)صدر لاہور ہائیکورٹ بار حفیظ الرحمان چودھری کی قیادت میں وکلاء رہنماؤں نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس سردار محمد شمیم خان سے ملاقات کی ہے اور پی آئی سی واقعہ پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے گرفتار وکلاء کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر حفیظ الرحمان چودھری ایڈووکیٹ نے وکلاء رہنماؤ ں کے  ہمراہ  چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سردار شمیم احمدخان سے ملاقات کی ،وکلاء رہنماؤں نے گرفتار وکلا ء کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کی جانب سے وکلا ء پر تشدد کیا گیا ہے۔علاوہ ازیں فنانس سیکرٹری ہائیکورٹ بار عنصر جمیل گجر نے کہا ہے کہ وکلا کی رہائی تک ہڑتال جاری رہے گی۔

واضح رہے کہ وکلاء نے پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) پر حملہ کرکے وہاں توڑ پھوڑ کی اور متعدد افراد کو تشدد کا نشانہ بنایا،پولیس اور صحافی بھی وکلاء کے تشدد کا نشانہ بنے جبکہ مشتعل وکیلوں  نے ہسپتال میں مریضوں کے ساتھ آنے والے لواحقین کو تشدد کا نشانہ بنانے کے ساتھ ہسپتال میں کھڑی گاڑیاں بھی توڑ دیں جبکہ ایک پولیس وین کو بھی نذر آتش کر دیا ،وکلا نے صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان پر بھی تشدد کیا جنہوں نے بھاگ کر اپنی جان بچائی، پولیس کی جانب سے اب تک 20 سے زائد  وکلاء کو حراست  میں لے لیا گیا ہےجبکہ سی سی ٹی  وی  فوٹیج کی مدد سے تشدد کرنےوالے وکلا کے خلاف کریک ڈاؤن بھی شروع کر دیا گیا ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور