راؤ  انوار کے  الزامات پر پیپلز پارٹی کا ردعمل سامنے آگیا

راؤ  انوار کے  الزامات پر پیپلز پارٹی کا ردعمل سامنے آگیا
راؤ  انوار کے  الزامات پر پیپلز پارٹی کا ردعمل سامنے آگیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق ایس ایس پی ملیر  راؤ  انوار کے  پی پی قیادت اور  سندھ حکومت پر  الزامات پر پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین کا ردعمل سامنے آگیا۔

سیکرٹری اطلاعات پی پی پی پی شازیہ مری نے ایک بیان میں کہا ہےکہ  راؤ  انوار  جعلی پولیس مقابلوں کی شہرت رکھنے والا بدنام زمانہ سیریل کلر ہے،  راؤ انوار کے تمام الزامات  بے بنیاد ہیں، ایسا لگتا ہے جیسے وہ کوئی اسکرپٹ پڑھ رہا ہو۔

شازیہ مری کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو اس وقت سب سے فعال سیاسی رہنما ہیں لیکن کچھ لوگوں کو یہ اچھا نہیں لگ رہا۔ایک عرصے سے پیپلز پارٹی کا میڈیا ٹرائل ہو رہا ہے، لیکن پارٹی کی ساکھ کو  ایسے اوچھے ہتھکنڈوں سےکوئی فرق نہیں پڑتا۔

خیال رہے کہ سابق ایس ایس پی ملیرراؤ انوارکا کہنا تھا کہ کراچی میں بدامنی اور ٹارگٹ کلنگ کا تعلق بڑے سیاستدانوں کے ساتھ ہے۔ انہوں نےدعویٰ کیا کہ پیپلز پارٹی حکومت کی جانب سے 7 کھرب روپیہ منی لانڈرنگ کے ذریعہ ملک سے باہر لے جایا گیا۔

انہوں نے کہا تھا کہ 2013 کے بعد سندھ میں پولیس کے ذریعہ لوگوں کے پلاٹس پر قبضے کیے گئے۔ 

راؤانوارنے مزید کہاتھا  کہ، ’مدینہ میں بھی بلڈنگیں بنوالیں کہ حاجی آتے ہیں تو کرائے پر دے دیں گے۔ 2018 میں جے آئی ٹی کے ذریعے یہ پکڑے گئے تھے، جعلی اکاؤنٹس سے پیسہ باہر لے کر گئے، کوئی فالودے والے تو کوئی کسی کے نام پر تھا۔ جعلی اکاؤنٹس سے بلاول ہاؤس کے کھانوں اورکیک کی ادائیگی ہوئی‘۔