مقبول بٹ اورمحمدافضل گورو کی باقیات واپس کی جائیں

مقبول بٹ اورمحمدافضل گورو کی باقیات واپس کی جائیں

 سرینگر(کے پی آئی) حریت کانفرنس کے تینوں دھڑوں اور لبریشن فرنٹ نے محمدمقبول بٹ اورمحمدافضل گوروکی باقیات کی واپسی کا مطالبہ دوہرایا۔انہوں نے بندشوں ،گرفتاریوں اورچھاپوں کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ قوم اورنہ قیادت اپنے سرفروشوں کو فراموش کرسکتی ہی۔ حریت (گ ) چیئرمین سید علی گیلانی نے محمد افضل گورو کی شہادت کے دو سال مکمل ہونے کے موقعے پر کرفیو جیسی پابندیاں عائد کرنی، مزاحمتی خیمہ کے خلاف کریک ڈان کرنی، دعائیہ مجالس پر پابندی لگانے اور گرفتاریوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ پابندیاں ہمارے سرفروشوں کی توہین کرنے کے مترادف کارروائی ہے اور حکومت اس طرح کی پالیسی پر عمل کرکے ایک بڑے طوفان کو دعوت دے رہی ہی۔ انہوں نے مقبول بٹ اور افضل گورو کی باقیات واپس لوٹانے کی مانگ دہراتے ہوئے کہا کہ یہ خالصتا ایک انسانی مسئلہ ہے اور دہلی والوں کو اپنی سنگ دلی ترک کرکے ان کو واپس کرنے میں مزید تاخیر نہیں کرنی چاہیے۔ بیان میں گیلانی نے کہا کہ کشمیری قوم آج اپنے اس سپوٹ کی قربانی کو یاد کررہی ہی، جس کو دوسال قبل بھارت کی تہاڑ جیل میں تختہ دار پر چڑھایا گیا۔( ع) چیئر مین میرواعظ عمرفاروق نے گورو کی دوسری برسی کے موقعے پر کشمیری عوام کی جانب سے شہید کی باقیات کی واپسی اور بھارت کی جانب سے کشمیر میں روا رکھی جا رہی ظلم و تشدد کی کاروائیوں کے خلاف ہمہ گیر احتجاجی ہڑتا ل پر پوری قوم کے جذبہ حریت کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ مبنی برحق جدوجہد کے تئیں وابستگی اور استقامت کا مظاہرہ مقصد کے حصول میں کامیابی کے ناگزیر تقاضے ہیں۔ میرواعظ نے شہید گورو کی برسی کے موقعے پر شہر کے بیشتر علاقوں میں کرفیو کے نفاذ ، قدغنوں ، حریت پسند قائدین کی گرفتاریوں اور نظر بندیوں اور چھاپوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ شدت پسندی اور بالادستی سے عبارت سیاستکاری کے بلاجواز ہتھکنڈے کشمیری قوم کے جذبہ مزاحمت کو توڑنے میں کامیاب نہیں ہو سکتی ۔لبریشن فرنٹ چیئرمین محمدیاسین ملک نے سینٹرل جیل سے ایک بیان میں کہا ہے کہ محمدمقبول بٹ اور محمد افضل گورو کی جسد خاکی اور باقیات جو تہاڑ جیل کی قید میں ہے کی کشمیر واپسی تک یہ جدوجہد اجتماعی طور پر جاری رہے گا۔ ملک یاسین نے کہا کہ محمد افضل گورو ایک محب وطن نو جوان تھا، جنہیں جابروظالم حکمرانوں کے ہاتھوں شہادت پائی اور ہمیشہ سے جو لوگ اقتدار کے مزے لوٹنے میں مصروف رہے ہیں وہی افضل اور دوسرے لاکھوں شہدا کی ہلاکتوں میں برابر کے شریک ہیں۔ انہیں ایک نہ ایک دن اپنے گناہوں کا حساب دینا پڑے گا گا۔ملک یاسین نے کہاکہ1فروری کواقوامِ متحدہ کے سیکریٹری جنرل کے نام ایک یادداشت اقوامِ متحدہ کے نمائندہ سری نگرکے حوالے کی جائے گی یادداشت میں اقوامِ متحدہ سے مطالبہ کیا جائے گا کہ محمد مقبول بٹ اور محمد اففل گوروکی باقیات کوکشمیری قوم کے حوالے کرنے کیلئے بھارت پر سفارتی دباؤ ڈالا جائی۔ ملک یاسین نے عوام الناس کومکمل اور بھرپورہڑتال کر کے تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ اب گیارہ فروری کو مکمل ہڑتال کریں اور ظلم وجبر کے خلاف اپنی جدوجہد اور اپنے شہدا کی باقیات کی کشمیر واپسی کیلئے اجتماعی طور پر آواز بلند کریں ۔ حریت کانفرنس (جے کے ) کے رہنما اور فریڈم پارٹی سربراہ شبیر احمد شاہ نے اپنے پیغام میں محمدافضل گوروکے لواحقین کو یقین دلایا کہ ریاستی عوام اور حریت قیادت و وابستگان ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ہم اس گھر کی عزمت و عظیمت کا بخوبی ادراک کرتے ہوئے یہ تسلیم کرتے ہیں کہ محمڈ افضل کی شہادت کبھی رائیگان نہیں ہوگی اور ان کی شہادت تحریک آزادی کے کاروان میں شامل سبھی لوگوں کے لئے مہمیز ثابت ہورہی ہے ۔شاہ نیفروری کو ہڑتال کرنے پر لوگوں کا شکریہ ادا کیا اور اپنی مخلصانہ اپیل میں محمد مقبول بٹ کی اکیسویں برسی 11 فروری کو ایک ہمہ گیر ہڑتال کرنے اور ان دو شہدا کے باقیات کی واپسی کے لئے احتجاج کرنے کے لئے ا پیل دوہراتے ہوئے کہا ہم بھارتی حکام پر واضح کریں گے کہ ہم ان کے چھوڑے ہوئے مشن کے وارث ہیں اورریاست میں بھارت کے قبضے کے خلاف اپنی سیاسی جدوجہد اور مشن پر گامزن ہیں۔

مزید : عالمی منظر