پی ٹی سی ایل کی کنٹونمنٹ ایکٹ کی دفعہ 87 کیخلاف درخواست کی سماعت

پی ٹی سی ایل کی کنٹونمنٹ ایکٹ کی دفعہ 87 کیخلاف درخواست کی سماعت

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے کنٹونمنٹ ایکٹ کی دفعہ 87کو غیرآئینی قرار دینے کے لئے دائر درخواست پر کنٹونمنٹ بورڈ سے دو ہفتوں تک جواب طلب کر لیا۔مسٹر جسٹس شمس محمود مرزا نے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن لمیٹڈ کی درخواست پر سماعت کی،د رخواست گزار کے وکیل خواجہ عاصم محمود ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ کنٹونمنٹ ایکٹ کی دفعہ 87کے تحت کسی بھی پراپرٹی کے واجبات کے تخمینے کا تعین کیا جاتا ہے اور اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کرنے کیلئے تخمینہ شدہ رقم جمع کرانا لازمی ہے جو غیر آئینی ہے، انہوں نے بتایا کہ انیس سو چوبیس میں جب یہ قانون نافذ ہوا تو تخمینے کی رقم معمولی ہوتی تھی مگر اپ تخمینے کی رقم کروڑوں میں بنتی ہے جو شہریوں اوراداروں کیلئے جمع کرانا ممکن نہیں، سماعت کے بعد عدالت نے کنٹونمنٹ بورڈ سے دو ہفتوں تک جواب طلب کرتے ہوئے ایکٹ کی قانونی حیثیت کے خلاف دائر تمام درخواستیں یکجا کر کے سماعت کے لئے پیش کرنے کی ہدایت کر دی۔

مزید : صفحہ آخر