قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں خواجہ آصف کی عدم شرکت پر اظہار برہمی

قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں خواجہ آصف کی عدم شرکت پر اظہار برہمی

اسلام آباد (آئی این پی) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے پانی و بجلی کے اجلاس میں وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف اور چیئرمین واپڈا کی عدم شرکت پر چیئرمین قائمہ کمیٹی اور ارکان کا سخت برہمی کا اظہار ‘چیئرمین قائمہ کمیٹی نے کہا کہ یہ اجلاس خواجہ آصف کی مشاورت سے بلایاگیا ‘اس کے باوجود وہ شریک نہیں ہوئے ‘ پر وزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی نے اس پر کہا کہ میں ان کی نمائندگی کیلئے اجلا س میں آیا ہوں‘ چیئرمین زاہد خان نے کہا کہ ہم نے آپ کو نہیں بلایا تھا قواعد کے تحت آپ تو اجلاس میں شریک ہی نہیں ہو سکتے‘ آپ خاموش رہیں بات بھی نہ کریں‘ اس پر زاہد خان اور عابد شیر علی میں تلخی ہوگئی اور دونوں کے درمیان سخت جملوں کا تبادلہ ہوا۔ عابد شیر علی نے چیئرمین کمیٹی سے کہا کہ وہ جان بوجھ کر لڑائی کا ماحول بنا رہے ہیں ‘ضد کے علاوہ ان کو کوئی کام نہیں‘ اس لہجہ میں بات کرنے کا کسی کو اختیار نہیں ‘ بہتر ہو گا چیئرمین صاحب رولز بھی پڑھ لیا کریں ‘ اس پرچیئرمین کمیٹی نے کہا کہ رولز کے تحت وزیر مملکت اجلاس میں شرکت نہیں کر سکتا‘ خاموش رہیں‘ وزیر مملکت نے کہا کہ چیئرمین کمیٹی کو رولز پڑھنے نہیں آتے تو ٹیوشن رکھ لیں تا کہ ان کو وزیر کا مطلب سمجھ آ سکے‘رولز میں صرف وزیر لکھا گیا ہے ۔ منگل کو کمیٹی کا اجلاس پارلیمنٹ ہاؤس میں چیئرمین سینیٹر زاہد خان کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں ارکان کمیٹی کے علاوہ متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ کمیٹی کو بتایا کہ واپڈا یوم تاسیس کی وجہ سے چیئرمین واپڈا اجلاس میں شرکت نہیں کر سکے۔ چیئرمین کمیٹی نے حیسکو میں کرپشن کے خلاف تحقیقات کیلئے سب کمیٹی قائم کر دی، جس کے کنوینئر نثار محمد خان ہوں گے، چیئرمین کمیٹی نے وفاقی وزری اور چیئرمین واپڈا کی عدم شرکت کے باعث کمیٹی کا اجلاس 19 فروری کو دوبارہ طلب کر لیا۔ جس پر وزیر مملکت نے کہا کہ ڈکٹیشن نہ دی جائے، صرف پارلیمنٹ اور کمیٹی کے احترام میں ہم بھی شریک ہوں گے لیکن رولز کے تحت اجلاس 15 دنوں کا نوٹس ضروری ہے۔ سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ میں اختیارات کو چیلنج نہیں کرنا چاہتا، اختلاف بھی نہیں کرتا لیکن وزیر اور چیئرمین کمیٹی دونوں اچھی یادیں چھوڑیں۔ سینیٹر شاہی سید نے کہا کہ سیاستدان آتے جاتے رہتے ہیں لیکن بیورو کریٹس ہمیشہ رہتے ہیں، چیئرمین نے واپڈا کے چیئرمین، ایم ڈی میپکو اور وفاقی سیکرٹری کی کمیٹی کے گزشتہ اجلاس میں شرکت نہ کرنے پر اسٹیبلشمنٹ کو خط لکھنے کی سفارش کرتے ہوئے کہا کہ وہ ان کے خلاف کارروائی کریں۔

مزید : علاقائی