جی ایس ٹی کے نفا ذ پر اعتماد میں نہیں لیا، فیصلہ واپس نہ لیا تو ایوان میں نہیں آئینگے ، خورشید شاہ

جی ایس ٹی کے نفا ذ پر اعتماد میں نہیں لیا، فیصلہ واپس نہ لیا تو ایوان میں نہیں ...

 اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ، اے این این)قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہاہے کہ پٹرولیم مصنوعات پر جی ایس ٹی لگانے کیلئے اعتماد میں نہیں لیا گیا ،آئی ایم ایف کے کہنے پر اضافی ٹیکس لگائے جا رہے ہیں ، ایسی حکومت دنیا میں نہیں دیکھی جو آئے دن ٹیکس لگائے ، پارلیمنٹ کا احترام کیا جائے یہ نہ ہو کوئی اور آجائے، پیپلز پارٹی کے دور میں منی بجٹ نہیں ہوتے تھے ان کے دور میں عتیقہ اوڈھو ، اجینو موٹو اور سو موٹو ہوتے تھے ۔ قومی اسمبلی کے اجلاس سے واک آؤٹ کے بعدپارلیمنٹ ہاؤس کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے خورشدشاہ نے کہا کہ پارلیمنٹ کے اندر ہم نے عوا می نقطے پر اعتراض اٹھایا ،پٹرولیم مصنوعات پر جنرل سیلز ٹیکس لگانے کے لئے اعتماد میں نہیں لیا گیا ،پارلیمنٹ کے ہوتے ہوئے ٹیکسز لگانا اور منی بجٹ لے آنا باعث تشویش امر ہے ، حکمران ا پنی نااہلی کی سزا عوام اور پارلیمنٹ کو نہ دیں ، اس طرح کے ٹیکسز امریکا اور یورپ میں بھی نہیں لگائے جاتے ۔انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم ہو تی ہیں تو ٹیکسز لگا کر ریونیو پورا کیا جاتا ہے اورجب قیمتیں بڑھ جاتی ہیں تو پھر یہ نہیں سوچتے کہ کیسے کم کی جائیں ۔انہوں نے کہاکہ اگرجی ایس ٹی کے نفاذ کافیصلہ واپس نہیں لیا جاتاتو ایوان میں نہیں آئیں گے ۔

مزید : علاقائی