کچھ لوگوں کی ڈاڑھی پوری طر ح کیوں نہیں آتی؟تحقیق میں وجہ سامنے آگئی

کچھ لوگوں کی ڈاڑھی پوری طر ح کیوں نہیں آتی؟تحقیق میں وجہ سامنے آگئی
کچھ لوگوں کی ڈاڑھی پوری طر ح کیوں نہیں آتی؟تحقیق میں وجہ سامنے آگئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

 لندن (نیوز ڈیسک) داڑھی مردانہ وجاہت کا اہم جزو ہے مگر بدقسمتی سے کچھ مردوں کے چہرے پر داڑھی پوری طرح نہیں آتی ہے بلکہ کہیں کہیں ہی کچھ بال نظر آتے ہیں۔ اگرچہ ماضی قریب تک اس مسئلے کی وجوہات مکمل طور پر معلوم نہیں تھیں مگر اب سائنسدانوں نے یہ سراغ لگا لیا ہے کہ بعض مردوں کے چہرے پر داڑھی کے بال پوری طرح کیوں نہیں آتے۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ مردوں کے جسم میں پائے جانے والے اینڈروجن ہارمون داڑھی کے بال اگانے میں بنیادی کردار ادا کرتے ہیں۔ ان میں سے مشہور ترین ہارمون ٹیسٹاسٹیرون ہے جو مردوں میں ثانوی جنسی خصوصیات بھی پیدا کرتا ہے۔ یہ ہارمون بالوں کی جڑوں میں موجود ڈرمل پاپیلا نامی حصے تک پیغامات منتقل کرتا ہے جس کے نتیجے میں چہرے پر بال اگتے ہیں۔ حالیہ تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ جن مردوں میں ٹیسٹاسٹیرون ہارمون نسبتاً کم پایا جاتا ہے ان میں چہرے پر بال اگنے کی شرح بھی کم ہوتی ہے۔ اسی طرح بالوں کی جڑوں میں پایا جانے والا انزائم 5ایلفا ریڈکٹیس کم ہونے کی صورت میں بھی بال اینڈروجن ہارمونز کے پیغامات موصول نہیں کرپاتے اور اس صورت میں بھی داڑھی کے بال پوری طرح نہیں اگ پاتے۔ ماہرین کہتے ہیں کہ جن مردوں میں داڑھی کے بال بھرپور طور پر اگتے ہیں ان میں گنجے پن کی شرح بھی زیادہ پائی جاتی ہے اور اس طرح جن لوگوں کے چہرے پر بال پوری طرح نہیں اگتے ان کے لئے یہ خوشخبری ہے کہ ان میں گنجے پن کی شرح نسبتاً کم پائی جاتی ہے۔

مزید : علاقائی