ہائیکورٹ ،وزیر اعظم اور تمام وزرائے اعلیٰ کے انتخابات کو کالعدم کرنے کی درخواست خارج

ہائیکورٹ ،وزیر اعظم اور تمام وزرائے اعلیٰ کے انتخابات کو کالعدم کرنے کی ...

لاہور (نامہ نگارخصوصی ) لاہور ہائیکورٹ نے وزیر اعظم نواز شریف اور تمام وزراء اعلیٰ کے انتخابات کو کالعدم کرنے اورانہیں کام سے روکنے کی درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کر دیا۔مسٹر جسٹس محمود مقبول باجوہ نے سید شبیر حسین بخاری کی طرف سے دائراس درخواست کی بطور اعتراض کیس سماعت کی، درخواست میں چیف الیکشن کمشنر ، سابق چیف الیکشن کمشنر ، تمام صوبائی الیکشن کمشنرز، سابق چیف جسٹس پاکستان افتخار محمد چودھری، وزیر اعظم میاں نواز شریف، چاروں ورزاء اعلی ٰاور سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن کوفریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ سابق ایڈیشنل سیکرٹری افضل خان نے میڈیا پر انتخابات میں دھاندلی کا اعتراف کیا تھا ، درخواست میں مزید کہا گیا کہ سابق ایڈیشنل سیکرٹری نے اس بات کا بھی اعتراف کیا ہے کہ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چودھری سے ملکر کر وزیر اعظم نوازشریف نے انتخابات میں دھاندلی کی ہے، وزیر اعظم اور چاروں وزراء اعلیٰ کو کام کرنے سے روکا جائے، گزشتہ روز درخواست گزار شبیر حسین بخاری نے موقف اختیار کیا کہ ان کی درخواست پر لاہور ہائی کورٹ آفس نے آرٹیکل 225 کے تحت درخواست کے ناقابل سماعت ہونے کا اعتراض لگایا ہے ، اس اعتراض کو دور کیا جائے تاہم مسٹر جسٹس محمود مقبول باجوہ نے عدالت عالیہ کے رجسٹرار آفس کا اعتراض برقرار رکھتے ہوئے قرار دیا کہ آئین کے آرٹیکل 225کے تحت انتخابات میں دھاندلی کے بارے میں ہائی کورٹ میں معاملہ نہیں اٹھایا جاسکتا۔

مزید : صفحہ اول