عام آدمی پارٹی نے دلی میں بی جے پی اور کانگریس پر’’جھاڑو‘‘ پھیر دیا

عام آدمی پارٹی نے دلی میں بی جے پی اور کانگریس پر’’جھاڑو‘‘ پھیر دیا

نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک) عام آدمی پارٹی نے ریاستی انتخابات میں 67 نشستوں پر کامیابی حاصل کر کے حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کا صفایا کر دیا ۔ وفاق میں حکمران جماعت بی جے پی محض 3 نشستیں حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی ہے جبکہ دلی میں مسلسل تین بار حکومت بنانے والی جماعت کانگرس کوئی بھی سیٹ حاصل کرنے میں ناکام رہی ہے اور موجودہ سیاسی صفحے سے اس کا بھی مکمل صفایا ہو گیا ۔تفصیلات کے مطابق عام آدمی پارٹی نے 70میں سے 67سیٹیں حاصل کر کے ریکارڈ فتح حاصل کی ہے ،دوسری طرف بی بی سی کے مطابق مودی نے شکست تسلیم کر لی ہے، بھارتی وزیر اعظم نے فون کر کے عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال کو مبارکباد دی ہے۔اروند کیجریوال نے اپنے حامیوں کی ایک ریلی میں کہا ہے کہ ’جو ذمہ داری ملی ہے اس سے کافی ڈر بھی لگ رہا ہے۔ میں درخواست کرتا ہوں پوری پارٹی سے کہ ذرا سا بھی غرور مت کریں۔ کانگریس اور بی جے پی کا یہ حال غرور کی وجہ سے ہوا۔ اگر ہم نے بھی یہ کیا تو یہی سبق عوام ہمیں پانچ سال بعد دکھائے گی۔‘کیجریوال نے اپنے تمام حامیوں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ’جو سچائی کے راستے پر چلتے ہیں، کائنات کی طاقتیں بھی ان کی مدد کرتی ہیں۔‘نئی دہلی ریاستی انتخابات میں اصل مقابلہ وزیر اعظم نریندر مودی کی جماعت بی جے پی اور اروند کیجریوال کی عام آدمی پارٹی کے درمیان تھا۔بھارتی وزیرِ اعظم نریندر مودی نے ریاستی انتخابات میں شکست تسلیم کرتے ہوئے اروند کیجریوال کو مکمل تعاون کا یقین بھی دلایا ہے۔بی جے پی کی جانب سے دہلی میں وزیر اعلی کے عہدے کی امیدوار کرن بیدی نے اروند کیجریوال کو مبارکباد دیتے ہوئے انہیں اس کامیابی کے لیے ’پورے پوائنٹس‘ دیے ہیں۔ادھر کانگریس کے رہنما اجے ماکن نے انتخابات میں پارٹی کی شکست کی ذمہ داری لیتے ہوئے سیکریٹری جنرل کے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔دہلی میں بی جے پی کے ریاستی دفتر میں پارٹی کارکن سے زیادہ میڈیا کے افراد نظر آئے،سات فروری کو نئی دہلی میں ووٹنگ مشینوں کے ذریعے ہوئی تھی اور ان انتخابات میں 67 فیصد سے زیادہ رائے دہندگان نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔نئی دہلی ریاستی کے انتخابات کو وزیر اعظم نریندر مودی کی مقبولیت کا پہلا امتحان تصور کیا جا رہا تھا۔دہلی پر پہلے بھی عام آدمی پارٹی کی حکومت تھی لیکن اس کے وزیرِ اعلیٰ کیجریوال نے گذشتہ فروری میں یہ کہہ کر استعفیٰ دے دیا تھا کہ ان کی انسدادِ بدعنوانی کی کوششوں کو مسدود کیا جا رہا ہے۔دہلی میں گذشتہ اسمبلی انتخابات میں عام آدمی پارٹی کو 28 سیٹیں ملی تھیں وہیں بی جے پی نے 31 سیٹیں حاصل کی تھیں۔

مزید : صفحہ اول