ایران میں پریمی جوڑوں کی ’حفاظت‘ کیلئے موبائل ایپ متعارف، چند گھنٹے میں ہی ملک بھر میں تہلکہ برپا کردیا، حکومت کو حرکت میں آنا پڑگیا

ایران میں پریمی جوڑوں کی ’حفاظت‘ کیلئے موبائل ایپ متعارف، چند گھنٹے میں ہی ...
 ایران میں پریمی جوڑوں کی ’حفاظت‘ کیلئے موبائل ایپ متعارف، چند گھنٹے میں ہی ملک بھر میں تہلکہ برپا کردیا، حکومت کو حرکت میں آنا پڑگیا

  

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) ایران میں محبت کرنے والے جوڑوں کو ”اخلاقی پولیس“ کا اکثر خوف رہتا ہے۔ یہ پولیس شہروں میں گشت کرتی رہتی ہے اور محبت کرنے والے جوڑوں کی شامت آئی رہتی ہے۔ ایک ڈویلپر نے ان جوڑوں کی حفاظت اور انہیں اخلاقی پولیس سے بچانے کے لیے ایک ایپلی کیشن بنا ڈالی۔ ڈویلپرز نے اس اس کا نام ”گیرشاد“ (Gershad) رکھا۔ اس ایپلی کیشن نے چند گھنٹوں میں ہی ایران میں تہلکہ مچا دیا۔ ہر نوجوان نے اسے ڈاﺅن لوڈ کرنا شروع کر دیا جس سے اس کے سرورز ہی جام ہو گئے۔ دوسری طرف ایرانی حکومت کو بھی تشویش لاحق ہو گئی اور اسے بھی حرکت میں آنا پڑا۔ یہ ایپلی کیشن دراصل شہروں میں اخلاقی پولیس کی موجودگی اور گشت کے روٹ سے صارفین کو آگاہ کرنے کے لیے بنائی گئی تھی تاکہ پریمی جوڑے اس ایپلی کیشن کے ذریعے جان سکیں کہ ان کے راستے میں کہیں اخلاقی پولیس تو موجود نہیں، اور اگر راستے میں پولیس موجود ہے تو وہ راستہ تبدیل کر سکیں۔

مزیدجانئے: ہنی مون پر ترکی لے جانے کا وعدہ پورانہ کرنے پر سعودی دلہن طلاق لینے عدالت پہنچ گئی

ایپلی کیشن گھنٹوں میں ہی اس قدر مقبول ہو گئی کہ اسے ہزاروں افراد نے ڈاﺅن لوڈ کرکے اپنے فونز میں انسٹال کر لیا۔ حکومت نے اس ایپلی کیشن کی مقبولیت کو دیکھتے ہوئے مبینہ طور پر اس کو بلاک کر دیا۔ ویب سائٹ ایران ہیومن رائٹس ڈاٹ او آرجی کی رپورٹ کے مطابق ڈویلپرز اس ایپ کو دوبارہ آن لان لانے کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں۔ یہ ایپ صرف اینڈرائیڈ فونز کے لیے بنائی گئی تھی۔ ایران میں خواتین کے لیے حجاب پہننا بھی لازمی ہے۔ اس طرح یہ ایپ ایسی خواتین کے لیے بھی معاون تھی جو کسی وجہ سے بغیرحجاب کے باہر نکل آئی ہوں۔ کیونکہ ان خواتین کو بھی اخلاقی پولیس کی طرف سے سزاﺅں اور جرمانوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس