کسانوں کو زرعی مداخل میں ریلیف، بہاولپور کو الگ صوبہ قرار دیا جائے، ڈاکٹروسیم اختر

کسانوں کو زرعی مداخل میں ریلیف، بہاولپور کو الگ صوبہ قرار دیا جائے، ...

ملتان‘بہاولپور (سٹی رپورٹر+ ڈسٹرکٹ رپورٹر ) پنجاب اسمبلی میں جماعت (بقیہ نمبر22صفحہ12پر )

اسلامی کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سیدوسیم اختر نے مطالبہ کیا ہے کہ کسانوں کے مسائل کے حل کے لیے کسان بچت کمیٹی تشکیل دی جائے اور پاکستانی کسان کو ٹیوب ویل چلانے کے لیے ڈیزل40 روپے فی لیٹر اور زرعی مقاصد کے لیے بجلی 2روپے فی یونٹ فراہم کی جائے۔ آئندہ آنے والی گندم کی فصل کا ایک ایک دانہ کسان سے اٹھایا جائے اور گنے کی قیمت کی کسان کو 100فیصد ادائیگی کرشنگ سیزن ختم ہونے سے پہلے کی جائے۔ انہوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ بہاولپور کو دوبارہ صوبے کی حیثیت سے بحال کرنے کی جو قرارداد منظور کی تھی اس پر عملدرآمد کیا جائے اور اسے الگ صوبہ قرار دیا جائے۔ وہ پنجاب اسمبلی میں زرعی اجناس کے حوالے سے بحث کے دوسرے روز خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ چولستان کی 66 لاکھ ایکڑ زرخیز اراضی کو قابل کاشت بنانے کے لیے صوبوں میں ہم آہنگی پیدا کرکے کالاباغ ڈیم کی تعمیر کی جائے تاکہ چولستان کی اس زمین کو آباد کرنے کے لیے پانی میسر آسکے۔ انہوں نے کہا کہ کالا باغ ڈیم کی تعمیر سے نہ صرف چولستان کی صحرا میں تبدیل ہونے والی زمین آباد ہوگی بلکہ بجلی کا شارٹ فال بھی فوری طور پر ختم کیا جاسکے گا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر