نیب نے اورنج ٹرین منصوبے کے ٹھیکیدار کو گرفتار کر لیا

نیب نے اورنج ٹرین منصوبے کے ٹھیکیدار کو گرفتار کر لیا
نیب نے اورنج ٹرین منصوبے کے ٹھیکیدار کو گرفتار کر لیا

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) نیب نے اورنج ٹرین منصوبے کے کنٹریکٹر عامر لطیف کو گرفتار کر لیا، عامر لطیف کی کمپنی کالسن پرائیویٹ لمیٹڈ اس وقت جوائنٹ وینچر پراجیکٹ میں لاہور اورنج ٹرین کے پراجیکٹ پر کام کر رہی ہے ، قومی احتساب بیورو لاہور کی ٹیم نے عامر لطیف کو ایک اور پراجیکٹ میں بوگس ادائیگیوں کے فراڈ میں گرفتار کیا ہے ۔ اخبار روزنامہ دنیا کے مطابق عامر لطیف کو حراست میں لیا گیا ہے ، آج جمعرات کے روز نیب عامر لطیف کا جسمانی ریمانڈ لے گا، نیب نے پنجاب میں بدعنوان عناصر کے خلاف کارروائیاں تیز کر دی ہیں پنجاب بھر میں پانچ کروڑ سے زائد کے تمام کنٹریکٹ اور پراجیکٹ کی تفصیلات نیب کو جمع کرانا لازمی قرار دیا گیا ہے اس حوالے سے نیب نے ویب سائٹ پر ایک فارم بھی جاری کیا ہے جسے تمام سرکاری ادارے پراجیکٹ دینے سے قبل پر کر کے نیب کو جمع کرائیں گے ۔دوسری طرف 80 کروڑ 50 لاکھ روپے خوردبرد کرنے کے الزام میں نیب نے پانچ افراد کو گرفتار کر لیا۔ اخبار کے مطابق گرفتار افراد میں میاں مقصود اختر، رانا سلیم اختر ، پرویز اقبال، چوہدری حسن اختر، اعجاز حسین شامل ہیں۔ ملزم میاں مقصود اختر عبدالطیف اینڈ کمپنی کے شراکت دار اور پاک پی ڈبلیو ڈی میں سپر نٹنڈنٹ انجینئر تھے۔ دیگر گرفتار افراد میں رانا سلیم اختر انجینئر پاک پی ڈبلیو ڈی ملتان ، پرویز اقبال سابق ایس ڈی او پاک پی ڈبلیو ڈی فیصل آباد ، اعجاز حسین سب انجینئر فیصل آباد شامل ہیں۔ ملزموں نے عبدالطیف اینڈ کمپنی کو فائدہ پہنچانے کیلئے گھلپے کئے۔

مزید : اسلام آباد