ہائی کورٹ :حکم امتناعی کے باوجود اورنج ٹرین منصوبے پر کام جاری ،توہین عدالت کی درخواست پر متعلقہ حکام سے جواب طلب

ہائی کورٹ :حکم امتناعی کے باوجود اورنج ٹرین منصوبے پر کام جاری ،توہین عدالت ...
ہائی کورٹ :حکم امتناعی کے باوجود اورنج ٹرین منصوبے پر کام جاری ،توہین عدالت کی درخواست پر متعلقہ حکام سے جواب طلب

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے حکم امتناعی کے باوجود 11تاریخی عمارتوں کی حدود میں اورنج ٹرین منصوبے کی تعمیر پر کام نہ روکنے پر ڈی جی ایل ڈی احد چیمہ اور خواجہ احمد حسان سمیت 5افسروں کو توہین عدالت کی درخواست پرنوٹس جاری کر تے ہوئے 24فروی تک جواب طلب کرلیا ہے ۔جسٹس عابد عزیز شیخ اور جسٹس شاہد کریم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس دیئے کہ عدالت اپنے حکم پر عمل درآمد کروانا جانتی ہے ۔توہین عدالت کی یہ درخواست مقامی شہریوں کامل خان ممتاز اور نیلم حسین کی طرف سے اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی وساطت سے دائر کی گئی ہے جس میں ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ ،چیف انجینئرایل ڈی اے اسرار سعید، منصوبے کے پیٹرن انچیف خواجہ احمدحسان،ڈی جی ادارہ تحفظ ماحولیات ڈاکٹر جاوید اقبال اور ڈی جی آرکیالوجی چودھری محمد اعجاز کو فریق بنایا گیا ہے۔توہین عدالت کی درخواست میں بتایا گیا کہ 28 جنوری کو حکم امتناعی جاری کرکے 11 تاریخی عمارتوں کی 200 فٹ کی حدود میں تعمیراتی کام سے روکا گیا تھا لیکن ہائیکورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تعمیراتی کام جاری ہے۔ درخواست گزار کے وکیل اظہر صدیق نے الزام لگایا کہ حکومت نے عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کو اپنا وطیرہ بنا لیا ہے اور ترقی کے نامور پر آثارقدیمہ کی تباہی، حکومت ترجیحات پر ایک سوالیہ نشان ہے۔درخواست میں استدعا کی گئی کہ ہائیکورٹ کے احکامات کے باوجود تعمیراتی کام نہ روکنے پر توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد تمام مدعا علیہان کو 24فروری کے لئے نوٹس جاری کردیئے ہیں۔

مزید : لاہور