اپنے پاسپورٹ کے ساتھ غسل خانے میں جاکر نوجوان برطانوی لڑکی کی ایسی حرکت کہ تھائی لینڈ نے ملک میں داخلے پر پابندی لگادی، واپس بھیج دیا، آپ بھی احتیاط کریں

اپنے پاسپورٹ کے ساتھ غسل خانے میں جاکر نوجوان برطانوی لڑکی کی ایسی حرکت کہ ...
اپنے پاسپورٹ کے ساتھ غسل خانے میں جاکر نوجوان برطانوی لڑکی کی ایسی حرکت کہ تھائی لینڈ نے ملک میں داخلے پر پابندی لگادی، واپس بھیج دیا، آپ بھی احتیاط کریں

  

بنکاک (نیوز ڈیسک) کسی بھی شخص کے لئے قومی پاسپورٹ انتہائی اہم دستاویز کی حیثیت رکھتا ہے، جسے ہر کوئی بہت احتیاط کے ساتھ سنبھال کر رکھتا ہے، لیکن ایک برطانوی دوشیزہ نے اپنے پاسپورٹ کا ایسا شرمناک استعمال کردیا کہ ناصرف غیر ملک میں بے پناہ شرمندگی اٹھانا پڑگئی بلکہ ملک میں داخلے کی اجازت ہی نہ مل سکی۔ 

یہ افسوسناک معاملہ 28 سالہ برطانوی خاتون فائی ولسن کے ساتھ تھائی لینڈ میں پیش آیا۔ اخبار ڈیلی میل کے مطابق فائی کا کہنا ہے کہ وہ اور اس کی ایک دوست شراب کے نشے میں بدحواس تھیں اور اسی دوران انہیں واش روم جانے کی ضرورت پیش آگئی۔ فائی نے بتایا کہ اسے ٹوائلٹ پیپر نہ ملا تو اپنے پاسپورٹ میں سے ہی چند صفحات پھاڑ کر ٹوائلٹ پیپر کے طور پر استعمال کرلئے۔ جب ائیرپورٹ حکام نے فائی کا پاسپورٹ دیکھا تو اس میں سے کچھ صفحے غائب پاکر ان سے اس کے متعلقسوالات کئے۔ فائی کا کہنا ہے کہ پہلے تو انہوں نے بہانے بازی کی کوشش کی لیکن بالآخر بتادیا کہ انہوں نے پاسپورٹ کے صفحات کو ٹوائلٹ پیپر کے طور پر استعمال کرلیا تھا۔

یہ سنتے ہی ائیرپورٹ اہلکار حیرت سے ان کا منہ تکنے لگے اور پھر کچھ دیر بعد انہوں نے فائی کو بتایا کہ وہ تھائی لینڈ میں داخل نہیں ہوسکتیں اور وہیں سے انہیں واپس جانے کا حکم جاری کردیا گیا۔ فائی کا کہنا ہے کہ برطانیہ واپسی پر پرواز میں ان کے ساتھ ایک سیکیورٹی اہلکار کو خصوصی طور پربٹھایا گیا تھا اور دیگر مسافر بار بار ان کی طرف حیرانی کے ساتھ دیکھتے تھے کہ اس خاتون کے ہمراہ سیکیورٹی اہلکار کیوں مستقل طور پر موجودہے۔ وہ کہتی ہیں کہ انہیں ناصرف ائیرپورٹ حکام کے سامنے شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا بلکہ ایک مجرم کی طرح اپنے وطن واپس لوٹنا پڑا جس پر انہیں سخت پشیمانی ہوئی۔

فائی کا مزید کہنا تھا کہ انہیں اب احساس ہے کہ پاسپورٹ کے صفحات کو ٹوائلٹ پیپر کے طور پر استعمال کرکے انہوں نے واقعی ایک شرمناک کام کیا تھا اور یہ کہ اگر وہ نشے میں نہ ہوتیں تو کبھی اس کا تصور بھی نہیں کرسکتی تھیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس