کستان کی یونیورسٹیوں کا نوے فیصد نصاب نظریاتی ہے،پروفیسرجمیل

کستان کی یونیورسٹیوں کا نوے فیصد نصاب نظریاتی ہے،پروفیسرجمیل

لاہور(کامرس رپورٹر۔ایجوکیشن رپورٹر)ماہرتعلیم،لاہورگیریژن یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلرڈاکٹرپروفیسرجمیل انورکاکہناہے کہ پاکستان کی یونیورسٹیوں کا نوے فیصد نصاب نظریاتی ہے، جبکہ صرف دس فیصد نصاب پریکٹیکل ہے۔کیمسٹری کا طالب علم وائٹ بورڈ پرایٹم بنانے کاطریقہ تو بتاسکتاہے۔لیکن وہ عملی طورپرصابن بھی نہیں بناسکتا۔ضرورت اس امرکی ہے کہ طالبعلموں کو انٹرپینورشپ سکھائی جائے۔تاکہ وہ اپنے کاروبارکاسوچیں،صرف یہی چیزپاکستان کو غربت سے نکال سکتی ہے۔

ان خیالات کااظہارانہوں نے فیڈریشن چیمبرآف کامرس اورمستقبل کے اشتراک سے ہونے والی صوبائی کانفرنس میں کیا۔انہوں نے حکومت سے کہاکہ وہ انٹرپرینورشپ کا نظریہ نصاب میں متعارف کرائے۔ٖپاکستان ٖفیڈریشن آف چیمبرزآف کامرس اینڈانڈسٹریزکے ریجنل چئیرمین پنجاب منظورالحق ملک نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ خواتین کی نصف سے زائیدآبادی کوترقی کے عمل میں شریک کئے بغیرترقی ممکن نہیں۔مستقبل کے صدرراحت بابرنے کہاکہ اکیسویں صدی میں عالمی مقابلے کی ترقی کی دوڑمیں شامل ہونے کے لئے ضروری ہے کہ نوجوانوں کو انٹرپرینوئیرشپ کی تعلیم و تربیت سے آراستہ کیا جائے اوراسکے لئے ضروری ہے کہ انٹرپرینوئرشپ کونصاب میں شامل کیاجائے۔صدرویمن چیمبرآف کامرس شازیہ سلیمان نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ انٹرپرینوئرشپ کے آئیڈیاکونصاب کاحصہ بنایاجائے۔سینئرصحافی لطیف چوہدری کاکہناتھاکہ انٹرپرینوئرشپ کے پرائمری کے نصاب کاحصہ بنایاجائے۔اورطالب علموں پرکتابوں کابوجھ کم کیاجائے۔کانفرنس میں لاہورکالج فارویمن یونیورسٹی کے شعبہ ماس کمیونیکیشن کی سربراہ ڈاکٹرانجم ضیاء،میجرریٹائرڈمنصور،جی سی یولاہورکے ایسوسی ایٹ پروفیسرڈاکٹرنعمان آفتاب،پی ٹی وی کے پروڈیوسرکرنٹ افئیرزسیدامجدعلی شاہ،ڈاکٹراسلم ڈوگر،جی سی یونیورسٹی کے استادسفیان مجید،سینئرصحافی نویدچوہدری،لورالائی یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسرڈاکٹرعبداللہ خان،ڈاکٹرتنویرقاسم،یونیورسٹی آف گجرات سیالکوٹ کیمپس کے چیف ایگزیکٹوریحان یونس،پروڈیوسرنعیم شیخ،جاویدشاہ ریڈیوپاکستان،سینئر صحافی جاویداقبال،سمیڈاسے اجلال اعوان،سینئرصحافی رائے ندیم،منہاج یونیورسٹی سے خرم خورشید،مستقبل کے نائب صدرڈاکٹرارشد علی ،صوبائی سربراہ فرسٹ ویمن بینک کاشف سہیل شیخ،اورایف پی سی سی آئی کے ریجنل سیکریٹری جنرل محمدرفیق آسی نے بھی شرکت کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4