ریلوے سٹیشن پر بھتہ خوری اور ڈرائیوروں پر تشدد کے خلاف روڈ کارواں کل نکالا جائے گا

ریلوے سٹیشن پر بھتہ خوری اور ڈرائیوروں پر تشدد کے خلاف روڈ کارواں کل نکالا ...

لاہور( کامرس رپورٹر) ریلوے سٹیشن پر بھتہ خوری اور ڈرائیوروں پر تشدد کے خلاف ہر صورت 12فروری کو روڈ کارواں نکالا جائے گا ٹھیکیداروں کی جانب سے دی جانے والی سنگین نتائج کی دھمکیاں ہمارے عزم کو کمزور نہیں کر سکتیں۔ہم نے کمشنر، ڈپٹی کمشنر، آئی جی پنجاب، سی سی پی او، ڈی آئی جی آپریشن، ڈی آئی جی ٹریفک، ایس ایس پی سکیورٹی و دیگرقانون نافذ کرنے والے اداروں کو سکیورٹی فراہم کرنے کیلئے خط لکھ دیا ہے۔

کیونکہ ٹھیکیداروں کے بااثر پشت پناہ سامنے آ گئے ہیں ہمیں ان کی جانب سے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما شوکت بسراٗکی ریلی پر حملے کی طرز پرہمارے روڈ کارواں پر دھاوا بولنے کا خطرہ ہے۔

اگر کوئی ایسا واقع رونما ہوا تو اس کی ذمہ دار انتطامیہ ، ٹھیکیدار اور ان کے پشت پناہ ہوں گے۔ان خیالات کا اظہار عوامی رکشہ یونین کے چیئرمین مجید غوری نے اقبال ٹاؤن میں روڈ کارواں کی تیاریوں کے حوالے سے بلائے گئے ورکز کنونشن سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔ان کا کہناتھا کہ مزدور اللہ کا دوست ہے اور ہم نے اللہ کے دوستوں کا ہر حال میں ساتھ دینے اور ان کی بھتہ خوروں سے جان چھڑانے کا وعدہ کیا ہے۔وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے رکشہ ڈرائیوروں سے سٹیشن پر لی جانے والی پرچی معاف کی ہوئی ہے۔لیکن وہاں کے ٹھیکیدارریلوے پولیس، تھانہ نولکھا کے چند ایک اہلکاروں کو ساتھ ملا کر دھڑلے سے پرچی لے رہے ہیں۔وزیر اعلیٰ کو سب اچھا کی رپورٹ دی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے روڈ کارواں میں ہزاروں رکشے ہوں گے اور یہ انتہائی پرامن اور منظم ہوگا۔اگر شرپسندوں کو انتظامیہ کنٹرول کرنے میں ناکام رہی تو دما دم مست قلندر ہوگا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4