مزارعین کے حقوق کا مقدمہ ہر فورم پر لڑوں گا‘ جمشید دستی

مزارعین کے حقوق کا مقدمہ ہر فورم پر لڑوں گا‘ جمشید دستی

ملتان،عالیوالا(سپیشل رپورٹر، نامہ نگار)ایم این اے جمشید احمد خان دستی نے کہا ہے کہ بندر بانٹ، نا انصافی، من پسندی پنجاب حکومت کا شیوہ بن چکا ہے۔ تمام مزارعین کو بلا امتیاز پلاٹ دیئے جائیں۔ وزیر اعلی پنجاب،ڈپٹی کمشنر ملتان، اے سی ملتان ہوش کے ناخن لیں۔ انجمن مزارعین کے حقوق (بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

کا مقدمہ ہر فورم پر لڑوں گا اور سمبلی میں بھی آواز حق بلند کرتا رہوں گا۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے انجمن مزارعین کے زیر اہتمام پرانا شجاع آباد روڈ پر مزارعین میں پلاٹوں کی تقسیم میں بندر بانٹ، نا انصافی، من پسندی کے خلاف صدر انجمن مزارعین ، سابق جنرل سیکرٹری پنجاب مہر غلام محمد سیال کی زیر قیادت زراعتی فارم سے روڈ تک احتجاجی ریلی، اور احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کیااس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مہر غلام محمد سیال نے کہا کہ ہم اپنی تحریک آخری مزارع کو حق دلوانے تک جاری رکھیں گے۔ مالکی یا موت کا نعرہ محض نعرہ نہیں حقیقت ہے۔ من پسندی کرنے والے خدا کے غضب سے ڈریں۔ اس موقع پر رانا حامد، رانا اجمل، رانا جمشید، ودیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر انجمن مزارعین کے رہنما کثیر تعداد میں موجود تھے۔ جنہوں نے اپنے مطالبات کے حق میں خوب نعرے بازی کی۔ دریں اثناء پانامہ لیکس کا فیصلہ پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ ہو گا۔ میاں برادران اب چنگل میں پھنس چکے ہیں اب ان کو کوئی نہیں بچا سکتا وڈیرے اور جاگیر دار کے مقابلے میں مزدور اور غریب طبقے کے لوگوں کو آگے لاؤں گا۔ نوجوانوں اب تیار ہو جاؤ جب تک ہمارا علیحدہ صوبہ کے قیام عمل میں نہیں آتا اس وقت تک ہمارے ساتھ ظلم و ناانصافی اور جبر کا نظام قائم رہے گا۔ تخت لاہور کے بتوں کو گرانا ہو گا۔ میں ڈیرے کی عوام کی جرأت کو سلام کرتا ہوں وہ دلیر اور بہادر ہیں اس ماہ اپریل کو ملتان میں بہت بڑا جلسہ کروں گا ہر ضلع میں دورہ کر رہا ہوں اور لوگوں کو محرومی اور ان کے حقوق کیلئے جنگ لڑ رہا ہوں آپ لوگ وعدہ کریں ملتان میں بھرپور شرکت کریں گے رکن قومی اسمبلی جمشید احمد خان سردار نے ڈیرہ غازیخان میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں قاسم خان دستی کو شاندارجلسہ کرانے پر مبارکباد پیش کرتا ہوں عوام وڈیرے اور جاگیردار نظام سے تنگ آچکی ہے جلسہ میں رجب علی دستی، سردار عبدالرحمن خان دستی، سردار سلطان خان دستی، مہر خان کھوسہ، صفدر خان قیصرانی، ندیم دستی، حاجی عبدالغفور عرف گڈو دستی، ضمیر دستی، حاجی فیاض حسین سومرہ، محمد عمران قریشی، حافظ عرفان قریشی، فضل فرید دستی، مہیب غفار کھوسہ، شاویز دستی، بلاول اسماعیل گشکوری، اُسامہ روشن دستی، مومن لغاری، بشیر وڈانی، حاجی فیاض دستی، عمران سلیم قریشی، عبدالرزاق دستی، محمد عرفان خان قیصرانی، عامر لشاری، اور دیگر سینکڑوں افراد موجود تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر