عقیدہ ختم نبوت کے منکرین کیخلاف دینی و سیاسی جماعتیں متحد ہیں،مولانا اسماعیل

عقیدہ ختم نبوت کے منکرین کیخلاف دینی و سیاسی جماعتیں متحد ہیں،مولانا اسماعیل

ملتان (سٹی رپورٹر) حکمرانوں کی قادیانیت نوازی کی وجہ سے اسلامیانِ پاکستان کا اضطراب بڑھ رہا ہے۔ عقیدۂ ختم نبوت کے منکرین کے تعاقب کے لئے تمام دینی و سیاسی جماعتیں متفق ہیں،حکومت تحریک تحفظ ناموس رسالت کے چھ مطالبات قائدین کی دی ہوئی ڈیڈلائن کے اندر،اندر فی (بقیہ نمبر43صفحہ12پر )

الفور تسلیم کرے ورنہ حالات کی تمام تر ذمہ داری قادیانی نواز حکمرانوں پر عائد ہوگی ان خیالات کا اظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم تبلیغ مولانا محمداسماعیل شجاع آبادی،مولانا عزیزالرحمن ثانی،مولانا عبدالنعیم ،مولانا وسیم اسلم ،مولانا حافظ محمدانس ودیگر ائممہ و خطباء نے اسلام آبادآل پارٹیز کے چھ مطالبات کی حمایت میں مختلف مساجد میں خطاب کرتے ہوئے کیا اور اس مطالبات کے حق میں مذمتی قراردادیں بھی منظور کرائی گئیں۔ علماء نے اس امر پر شدید تشویش کا اظہار کیا کہ کچھ عرصہ گزرنے کے بعد بار بار قانون تحفظ ناموس رسالت کے خلاف موشکافی کی جاتی ہے اور ایک بار پھر ایوانِ بالا میں ۲۹۵۔سی کے قانون میں ترمیم یا مقدمہ کے اندارج کے طریقہ کار میں تبدیلی کا شوشا چھوڑا جارہا ہے۔ حکمران مغرب کو خوش کرنے کے لئے اسلامی فکر کے خلاف فیصلے کررہے ہیں۔ قادیانیوں کو آئین پاکستان سے انحراف کرنے اور عدالتوں کے فیصلوں سے بغاوت کرنے کی چھوٹ دی جارہی ہے۔ اس سال ۱۲ ؍ ربیع الاول کو دوالمیال ضلع چکوال میں میلاد النبی کے جلوس پر قادیانیوں کی طرف سے فائرنگ، ایک مسلمان کی شہادت اور متعدد کے زخمی ہونے کے باوجود کثیر تعداد میں اس علاقے کے مسلمانوں کو پابند سلاسل کردیا گیا ہے، جبکہ فائرنگ اور قتل میں ملوث قادیانیوں کو گرفتار کرنے کے بجائے ان کی مکمل پشت پناہی کی جارہی ہے۔علماء نے کہا کہ یکم فروری کو اسلام آباد میں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کی دعوت پر منعقد ہونے والی کُل جماعتی کانفرنس کے فیصلوں کوماننا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

علماء

مزید : ملتان صفحہ آخر