نسل نو ہمارے مستقبل کی نوید، نوجوان معاشرہ سے جہالت کی اندھیرے مٹائیں: رضا علی گیلانی

نسل نو ہمارے مستقبل کی نوید، نوجوان معاشرہ سے جہالت کی اندھیرے مٹائیں: رضا ...

بہاولپور(بیورورپورٹ)صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن پنجاب سید رضا علی گیلانی نے کہا ہے کہ تعلیم حکومت کی اوّلین ترجیحات میں شامل ہے اور حکومت نے وسائل کا رخ نوجوانوں کی ترقی اور فلاح و بہبود کی طرف موڑ دیا ہے۔صوبائی وزیر نے ان خیالات کا اظہار اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے دسویں کانووکیشن کے موقع پر اپنے خطاب میں کیا۔ اس موقع پر مجموعی طورپر 2014ء سیشن کے 1565گریجوایٹس کو ڈگریاں عطا کی گئیں جن میں 17پی ایچ ڈی، 251 ایم فِل، 134گولڈ میڈلز اور 131سلور میڈلزشامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ نوجوان نسل ہمارے سنہرے مستقبل کی روشن اُمید ہے یہی وجہ ہے کہ حکومت نوجوانوں کی تعلیم کے ساتھ ساتھ انہیں جدید ترین علوم و فنون سے آگاہ کرنے کے لیے بھرپور کوششیں کر رہی ہے۔یونیورسٹی سے ڈگری حاصل کرکے عملی میدان میں قدم رکھنے والے نوجوان بہت خوش نصیب ہیں اور اب ان پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ اپنے علم وہنر سے معاشرے کو مستفید کریں ۔نوجوانوں کو چاہیے کہ وہ معاشرے سے جہالت کے اندھیروں کو مٹائیں ، اپنے گردو پیش میں نظر آنے والے مسائل کے حل کے لیے علم کی روشنی سے نئی راہ دکھائیں۔ ہمارے نوجوان اعلیٰ ترین ذہنی صلاحیتوں سے مالا مال ہیں اور موجودہ دورِ عالمگیریت میں ملک وملت کو ترقی کی نئی راہوں سے ہم کنار کر سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاک چائنااقتصادی راہداری منصوبہ دراصل ہماری نوجوان نسل کے سنہرے خوابوں کی تعبیر اور روشن مستقبل کی ضمانت ہے۔ہمیں یقین ہے کہ ہمارے نوجوان اس منصوبے کی کامیابی میں کلیدی کردار ادا کریں گے۔انہوں نے کانووکیشن میں شریک طلبا وطالبات اور ان کے والدین کو مبارک باد دی اور اساتذۂ کرام کی علمی وفکری کاوشوں کو شان دار الفاظ میں خراجِ تحسین پیش کیا۔صوبائی وزیر نے کہا کہ پروفیسر ڈاکٹر قیصر مشتاق وائس چانسلر کی قیادت میں اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور نے مختصر عرصے میں بہت سی نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں اور معیارِ تعلیم میں بہتری کے ساتھ ساتھ انتظامی اور مالیاتی امور میں بھی یونیورسٹی نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ انہوں نے صرف دو سال کے عرصے میں یونیورسٹی کو عظیم تعلیمی و تحقیقی مرکز بنانے پر وائس چانسلر کو مبارک باد دی ۔انہوں نے مزید کہا کہ نوجوان قائد اعظم کے اُصولوں ایمان ، اتحاد اور تنظیم کو اپنا نصب العین بنائیں ،حب الوطنی کے جذبے کو فروغ دیں اور وطن کی خدمت کو اپنا شعار بنائیں۔ اس موقع پر اپنے خطبۂ استقبالیہ میں پروفیسر ڈاکٹر قیصر مشتاق وائس چانسلر نے یونیورسٹی میں جاری تعلیمی ، تحقیقی اور ترقیاتی سرگرمیوں کا تفصیلی جائزہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی اور صوبائی حکومت کی بھرپور معاونت کی بدولت انہوں نے یونیورسٹی کو علمی ترقی کے لیے ایک راہ متعین کر دی ہے اور الحمد للہ اساتذہ ، ملازمین اور طلبا وطالبات اس پر گامزن ہوکر جامعہ اسلامیہ کو ملک کی اعلیٰ ترین جامعات میں سرِ فہرست بنانے کے لیے کوشاں ہیں۔دو سال کے عرصے میں چوتھے کانووکیشن کا انعقاد اسی سلسلے کی کڑی ہے جس کے تحت یونیورسٹی میں برس ہا برس سے زیر التواء امور کو تیزی سے نپٹا کر تمام وسائل کا رخ تدریس و تحقیق میں اعلیٰ ترین معیار کے حصول کے لیے موڑ دیا گیا ہے۔یونیورسٹی نے ایک سال کے عرصے میں ہی چالیس درجے ترقی کے بعد ہائر ایجوکیشن کمیشن کی جامعات کی رینکنگ میں 51سے 11ویں پوزیشن حاصل کر لی ہے۔ آٹھ سلیکشن بورڈوں کے یکے بعد دیگرے انعقاد سے اساتذہ کی کمی دور ہو گئی ہے ۔ اسی طرح انتظامی شعبوں میں بھی انتہائی قابل اور پروفیشنل افراد کا تقرر کیا گیاہے۔2007ء سے زیر التواء 1300ملین روپے مالیت کے تین میگا پراجیکٹس رحیم یار خان ، بہاول نگر کیمپس کی عمارات اور زرعی کالج پایۂ تکمیل تک پہنچ چکے ہیں اور اربوں روپے لاگت کے نئے منصوبوں کے لیے تیزی سے پیش رفت جاری ہے۔اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور میں واقع تینوں کیمپسز کے گرد چار دیواری اور ریزرکٹ وائر لگا دی گئی ہے۔ خصوصاً بغداد الجدید کیمپس کے گرد 41دنوں میں 11.8کلومیٹرطویل دیوار اور سولر لائٹس کی تنصیب ایک اہم کارنامہ ہے جسے حکومت نے بے حد سراہا ہے۔ انہوں نے اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کے طلباء کو ہزاروں لیپ ٹاپس اور کروڑوں روپے کے وظائف کی فراہمی پر وفاقی اور صوبائی حکومت کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کانووکیشن میں رونق افروز ہونے پر صوبائی وزیر وپرو چانسلر سید رضا علی گیلانی کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا اور عوامی نمائندوں ،اعلیٰ حکام اور دیگر مہمانوں کی آمد کو بھی سراہا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر