توانائی بحران، بجلی کی لوڈشیڈنگ نے جنوبی پنجاب میں معمولات زندگی درہم برہم کر دئیے

توانائی بحران، بجلی کی لوڈشیڈنگ نے جنوبی پنجاب میں معمولات زندگی درہم برہم ...

ملتان، وہاڑی، سکندرآباد( سٹاف رپورٹر، نمائندگان) ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھرمیں توانائی بحران کے نتیجہ میں طویل اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ تواتر کے ساتھ جاری ہے جس کے باعث معمولات زندگی درہم برہم ہو کر رہ گئے ہیں اس سلسلہ میں ملتان سے سٹاف رپورٹر کیمطابق ملتان شہر سمیت میپکو ریجن میں بجلی کا بحران جاری ہے۔ نماز جمعہ کے اوقات میں شہر کے متعدد علاقوں میں بجلی بند رہی۔ ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں جمعہ کے روز کاروباری و تجارتی تعطیل ہونے کے باوجود بجلی کی طویل بندش رہی جس سے صارفین بالخصوص نمازیوں کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔دوسری جانب ایس ای میپکو مظفر گڑھ عطااللہ بھٹہ نے غازی گھاٹ فیڈر پر شیڈول سے کئی گنا زائد لوڈشیڈنگ کی شکایات بڑھنے پر بجلی کی بندش کا دورانیہ مزید بڑھادیا ‘پہلے 12گھنٹے لوڈشیڈنگ ہوتی تھی ‘ گزشتہ روز 16 گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کی گئی ‘صارفین نے احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت صورتحال کا نوٹس لے اور اپنی نا اہلی کا نزلہ بے گناہ صارفین پر گرانے والے ایس ای عطااللہ بھٹہ کے خلاف کارروائی کرے جو لائن لاسز پر قابو پانے میں ناکامی پر بے قصور صارفین کو تختہ مشق بنا رہے ہیں۔ وہاڑی سے بیورورپورٹ اور نامہ نگار کیمطابق بجلی کی طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جس سے تاجر طبقہ پریشان ہیں بجلی کی لوڈشیڈنگ سے تاجروں کے کاروبار ٹھپ ہو کر رہ گئے اور واپڈا کی طرف سے مسلسل تین گھنٹے بجلی بندرہنے سے تا جروں دکانداروں کے یو پی ایس جواب دے گئے اور جنریٹروں کا پٹرول ختم ہو گیا اور اکثر مساجد میں نما زجمعہ کی ادائیگی کے لیے وضو کے لیے پا نی نا یاب ہو گیا جس پر نما زیوں اور تاجروں عوامی وسماجی حلقوں محمد اختر سجاد حسین ، اجمل علی ، احتشام علی ، مقصوداحمد اللہ دتہ ، راناآفتاب ، ذوالفقار ، عبدالغفار ، سرور ، شاہد نعیم ودیگر نے احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکمرانوں کوچا ہیے کہ بجلی کی طویل غیراعلا نیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ فی الفور ختم کیا جا ئے سکندرآباد سے نمائندہ پاکستان کیمطابق سکندرآباد جس کی آبادی تقریبا پچاس ہزار پر مشتمل ہے گیس کی بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ نے شہریون کا جینا محال کیا ہو ا رات آٹھ بجے سے صبح چھ بجے تک طویل لوڈشیڈنگ جاری رہتی ہے گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہونے کے ساتھ ساتھ ملازمین اور طلباء اور طالبات گھروں سے ناشتے کے بغیر جاتے ہیں شہری بازاری کھانا کھانے پر مجبور ہوکر رہ گئے ہیں سیاسی و سماجی حلقوں سمیت شہریوں نے اعلیٰ حُکام سے فوری نوٹس لے کر اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر